این اے131ضمنی الیکشن ، پیپلز پارٹی کا امیدوار سعد رفیق کے حق میں دستبردار ، نون اور جنون میں سخت مقابلہ متوقع

این اے131ضمنی الیکشن ، پیپلز پارٹی کا امیدوار سعد رفیق کے حق میں دستبردار ، ...

 لاہور(شہزاد ملک) تحریک انصاف کے چیئرمین اور وزیراعظم عمران خان کی خالی کردہ قومی اسمبلی کی نشست این اے 131کے ضمنی الیکشن کیلئے بھرپور میدان سج گیا ہے اور مجموعی طور پر اس ضمنی الیکشن میں مختلف 28امیدوار میدان میں ہیں لیکن اس حلقہ میں اصل مقابلہ عام الیکشن کی طرح (ن) اور جنون کے درمیان ہے یہاں یہ امر قابل زکر ہے کہ اس حلقہ میں پیپلز پارٹی کے امیدوار عاصم محمود بھٹی نے پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور مسلم لیگ (ن) کی قیادت کے مابین گزشتہ دنوں اسلام آباد میں ضمنی الیکشن ملکر لڑنے کے معاہدے پر عمل کرتے ہوئے اپنی الیکشن مہم کو ختم کردیا ہے اور قیادت کے حکم کے مطابق یہاں کے ووٹرز کو (ن) لیگ کے امیدوار خواجہ سعد رفیق کو ووٹ دینے کا کہہ دیا ہے اس لئے اب مقابلہ پی ٹی آئی اور (ن) لیگ دونوں جماعتوں کے مابین ہے اور حکمران جماعت پی ٹی آئی کے نامزد امیدوار ہمایوں اختر خان اور اپوزیشن جماعت مسلم لیگ (ن) کے نامزد امیدوار خواجہ سعد رفیق نے حلقے میں مکمل طور پر ڈیرے ڈال دئیے ہیں اور ڈور ٹو ڈور انتخابی مہم کا سلسلہ بھی دن رات شروع کردیا ہے دونوں جماعتوں کے مقامی رہنما بھی بڑے زوروں سے اپنے اپنے امیدوار کی انتخابی مہم چلا رہے ہیں اور دونوں جماعتوں کے حامی جیت کے لئے پر عزم بھی دکھائی دیتے ہیں ۔دونوں جماعتوں کی پارٹیوں کی خواتین بھی ڈور ٹو ڈور مہم میں ایک ایک گھر کے ووٹرز بالخصوص خواتین سے جنرل الیکشن کی طرح ضمنی الیکشن میں بھی گھروں سے نکل کر ووٹ ڈالنے کے لئے اپیل کررہی ہیں ۔ضمنی الیکشن میں جنرل الیکشن والی گہما گہمی تو نہیں ہے لیکن کسی حد تک اس حلقہ میں جس انداز سے دونوں جماعتوں کے امیدوار انتخابی مہم چلا رہے ہیں ا س کے بعد یہاں پر ایک بھرپور الیکشن والا ماحول بن گیا ہے اور جیسے جیسے الیکشن کی تاریخ کا وقت قریب آرہا ہے تو انتخابی مہم بھی اپنے عروج کو پہنچ رہی ہے ۔ این اے 131کے مسلم لیگی کارکنوں اور عام ووٹرز کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کے صدر میاں شہباز شریف کی گرفتاری کی وجہ سے ہمدردی کا ووٹ خواجہ سعد رفیق کو ملنے کا امکان ہے ۔سروے میں حلقہ کے مسلم لیگی ووٹرز کا مورال بلند دکھائی دیا اور ان کا کہنا تھا کہ ہم ہر طرح کے حالات میں پارٹی کے ساتھ کھڑے تھے ہیں اور رہیں گے۔ان کا مزیدکہنا کہ خواجہ سعد رفیق کا بھی نیب میں کیس چل رہا ہے اور ان کی بھی گرفتاری کے حوالے سے خبریں زیر گردش ہیں اگر انہیں ضمنی الیکشن 14اکتوبر سے پہلے گرفتار کر لیا گیا توا سکا فائدہ بھی (ن) لیگ کو ہونے کا امکان ہے۔

عوامی رائے

مزید : صفحہ اول


loading...