(ن) لیگ کا پنجاب سے صفایا ممکن نہیں ، گرفتاری کیخلاف اپوزیشن متحد ہے ، مولانا فضل الرحمن

(ن) لیگ کا پنجاب سے صفایا ممکن نہیں ، گرفتاری کیخلاف اپوزیشن متحد ہے ، مولانا ...

 بہاولپور(بیورو رپورٹ) مولانافضل الرحمن نے کہا ہے کہ شہباز شریف کو بلایا کسی اور عنوان سے اور گرفتار کسی اور عنوان سے کیا گیا۔ن لیگ کا پنجاب سے صفایا نہیں ہوسکتا۔ قومی اسمبلی میں ریکوزیشن ہو چکی ہے تمام حزب اختلاف متحد (بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

ہیں اس مسئلے کو قومی اسمبلی پارلیمنٹ میں لے جایا جائیگا اور اس احتجاج کو بھرپور انداز میں قومی سطح پر لے جایا جائیگا۔اپوزیشن ایک پیج پر ہے اور باقی ایک پیج پر آرہے ہیں۔مشرف کے دور میں بھی تاثر تھا کہ مسلم لیگ ن ختم ہوچکی ہے ضیا الحق کی طرف سے ذوالفقار بھٹو کو پھانسی تک دے دی گئی لیکن جب پیپلز پارٹی بحال ہوئی تو انکی حکومت بنی جو جماعتیں عوام میں ہوتی ہیں انکی جڑیں آسانی سے نہیں کاٹی جا سکتیں مولانا فضل الرحمن نے علماء سے خطاب کے دوران کہاکہ اسلام آزادی، خوشحال معیشت اور بد حالی میں غریب کو مضبوط بنانے کا نام ہے آج کی حکومت کو دیکھ کر میں ذہنی طور پر اسے حکومت سمجھا ہی نہیں کہ جیسے حکومت ہو ہی نہیں رہی. ا ہمیں سیاسی طور پر طاقتور ہونے کی ضرورت ہے۔ مولانا فضل الرحمن کاکہنا تھا کہ ملک بھر میں تین سے چار لاکھ علما ء موجود ہیں علما کے متحد ہونے کیلیے جمیعت علما اسلام واحد اور سب سے بڑا پلیٹ فارم ہے ہم نے آئندہ پانچ سالوں کیلئے رکن سازی کا آغاز کردیا ہے۔اگر عزم کریں اور ہمت کریں تو اگلے پانچ سال میں دوسری تمام جماعتوں کے مقابلے سب سے بڑی قوت بن کر ابھر سکتے ہیں انھوں اپنے خلاف درج ایف آئی آر پرکہاکہ انتظامیہ کہتی ہے کہ مولانا صاحب ضمانت کروا کر آئیں میں نے کہا کہ میں گرفتاری سے نہیں ڈرتا اس لیئے ضمانت نہ کرواوں.اگر سیاست دان کی بیٹی جیل کی مصیبتین برداشت کرسکتے ہے تو ہماری مدرسے کا طالب علم جیل سے کیوں ڈرے گایہ ملک تین امیدوں کے ساتھ حاصل کیا.پہلا یہاں اسلامی نظام آئیگاستر سال میں ممکن نہ ہوسکا ۔دوسرا معاشی لحاظ سے کہ ہندو ہمیں کھا جائیگا۔لیکن ستر سال بعد بھی ہمارا غریب بھوکاہے اور حکمرانوں کے کتے مکھن کھاتے ہیں آج کی حکومت نے سی پیک کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے۔

مولانا فضل الرحمن

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...