سپیکر کا صوابی ویمن اینڈ چلڈرن ہسپتال کے قیام کا اعلان

سپیکر کا صوابی ویمن اینڈ چلڈرن ہسپتال کے قیام کا اعلان

صوابی(بیورورپورٹ)سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے صوابی میں وفاقی حکومت کی جانب سے وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال کے قیام کا اعلان کر تے ہوئے کہا کہ کٹیگری بی کے حامل اس جدید ترین ہسپتال میں تمام طبی سہولیات میسر ہوگی ۔محکمہ صحت کے مجاز حکام فوری طور پر اس ہسپتال کی فزیبلٹی رپورٹ تیار کرنے کے علاوہ پی سی ون بنا کر ارسال کریں تاکہ اس ہسپتال پر جلد از جلد کام شروع کیا جا سکے ان خیالات کااظہار انہوں نے باچا خان میڈیکل کمپلیکس شاہ منصور میں پیرا میڈیکل ایسو سی ایشن صوابی اور پیرا میڈیکل ایسو سی ایشن ( باچا خان میڈیکل کمپلیکس ، ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ، گجو خان میڈیکل کالج) کی مشترکہ حلف بر داری سے خطاب کے دوران کیا۔ اس تقریب سے ایم پی اے حاجی رنگیز احمد کے علاوہ صوبائی صدر پی ایم اے روئیداد شاہ ، ضلعی صدر فضل حکیم ، جنرل سیکرٹری ڈاکٹر فتح علی ، ناصر ، فخر عالم اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ ضلعی صدر فضل حکیم نے سپاس نامے میں پیرا میڈیکس کونسل کے قیام ،تمام اپ گریڈز شدہ پوسٹوں پر یکمشت تقرری ، صوابی میں پیرا میڈیکس و نرسنگ سکول قائم کرنے اور ڈی ایچ او کے لئے اپنے دفتر کے قیام جب کہ صوبائی صدر روئیداد شاہ نے صوبے میں منظور شدہ نو ہزار پوسٹوں کو بجٹ بک میں لانے کا مطالبہ کیا اس موقع پر سپیکر اسد قیصر نے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ ضلع صوابی میں تمام سرکاری ہسپتالوں کو اپ گریڈ کر دیا گیا ہے دو تین سال بعد صوابی والوں کو تمام دستیاب وسائل فراہم ہونے سے سرکارکی طرف سے تمام محرومیاں ختم ہو جائیں گی انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین اپنی ڈیوٹی سے انصاف کریں تب عوام کے مسائل حل ہونگے سرکاری ملازمین حکومت کے نہیں عوام کے خادم ہے ہر فرد کو نیا پاکستان بنانے کے لئے سوچنا ہو گا۔ انہوں نے اعلان کیا کہ وفاقی حکومت ایک ایسی قانون لا رہی ہے جس کے تحت ہر سرکاری ملازم سے ڈیوٹی میں غفلت برتنے پر جواب طلبی کی جائے گی اس قانون کے بعد کوئی ملازم ڈیوٹی میں غفلت نہیں کر سکے گا انہوں نے کہا کہ اپنے اور عوام کے ساتھ انصاف کرنے سے پاکستان آگے چلے گا دنیا میں پاکستان کا وقار بلند ہو گا انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیاسی قوتوں اور سب کو ذاتی مفادات سے بالاتر ملک کی ترقی ، خوشحالی ، امن اور روزگار کے لئے سوچنا چاہئے۔اگر میں نے بھی اپنے عہدے کا غلط استعمال کیا توسب سے پہلے میر احتساب ہونا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک سارے پاکستان اور خاص کر خیبر پختونخوا کے محرومیوں کے خاتمے کا ایک بڑا منصوبہ ہے اس حوالے سے چالیس دنوں کے دوران تین اجلاسوں کا انعقاد کیا گیا اور چار ماہ کے اندر اندر سی پیک کے حوالے سے رزلٹ سامنے آئیگاجس سے ملک میں معاشی ترقی اور خوشحالی آئے گی۔رشکئی انٹر چینج کے مقام پر سی پیک کے تحت اکنامک زون کے قیام سے بیس لاکھ افراد کو مختلف شعبوں میں روزگار کے مواقع میسر ہونگے انہوں نے کہا کہ ڈی آئی خان پشاور انڈس وے کوہاٹ ایکسپریس وے کو موٹر وے کے ساتھ ملانے اور سوات ایکسپریس وے کے قیام سے بنیادی مسائل حل ہو جائیں گے۔انہوں نے واضح کیا کہ سی پیک کے حوالے سے ہم کسی سے زیادتی کر رہے ہیں اور نہ ہی کسی کا حق چھینتے ہیں بلکہ اس منصوبے میں اپنا حق لے کر رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ مجھے اللہ پاک نے سپیکر شپ جیسے منصب سے نوازا ہے یہ موقع پر اپنے وطن ، مٹی کی ترقی ، خوشحالی کے لئے استعمال کر کے تمام محرومیوں کا ازالہ کرینگے۔اور یہ عہدہ اس مقصد کے حصول کے لئے استعمال کرونگا۔انہوں نے کہا کہ ضلع صوابی میں بہت زیادہ سیاست ہوئی ہے یہاں کے بزرگوں نے قر بانیاں دے کر تمام تحریکوں میں جیلیں کاٹنے کے علاوہ عملی کر دار ادا کیا ہے لیکن اس کے بدلے صوابی سمیت پورے پختونخوا کے پختونوں کو کچھ بھی نہیں ملا ہے ۔حکومتی عہدے آنی جانی چیزیں ہے دن رات عوام کی خدمت کرنے سے مجھے ذ ہنی سکون ملتا رہتا ہے انہوں نے کہا کہ باچا خان میڈیکل کمپلیکس میں ایک کروڑ روپے کی لاگت سے بلڈنگ کی تعمیر ایک سال کے دوران مکمل ہو جائے گی۔ یہ صوبے کا ایک جدید ترین ہسپتال ہو گا اور اس میں سٹاف سمیت تمام جدید طبی سہولیات میسر ہوگی۔گجو خان میڈیکل کالج کے لئے اراضی خرید کر اس پر جلد از جلد عمارت کی تعمیر شروع ہو جائے گی۔تحصیل ہسپتال ٹوپی ایک مکمل ہسپتال ہے اسی طرح ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال صوابی کی پرانی عمارت کو گرا کر اس پر 55کروڑ روپے کی لاگت سے بلڈنگ تیار ہو رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ صوابی میں جدید پارکس اور کمپلیکس ، رابطہ سڑکوں کی تعمیر کے علاوہ بجلی سسٹم کو اپ گریڈ کرنے کے لئے 220کے وی اے نیا گرڈ اسٹیشن قائم کیا جارہا ہے اسی طرح باجا ، نواں کلی اور چھوٹا لاہور میں نئے گرڈ اسٹیشن قائم کئے جارہے ہیں ۔#

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...