نوجوانوں پر طاقت کا استعمال کرنے سے تبدیلی سرکار کا اصل چہرہ عوام کے سامنے آیا

نوجوانوں پر طاقت کا استعمال کرنے سے تبدیلی سرکار کا اصل چہرہ عوام کے سامنے ...

ہنگو (بیورورپورٹ )پشاور یونیورٹی کے طلباء کو تشدد کا نشانہ بنانا بر بریت ہے۔یوتھ پر سیاست کرنے والوں کی حکومت میں نوجوانوں پر تشدد کیا جا رہا ہے۔ نوجوانوں پر طاقت کا استعمال کرنے سے تبدیلی سرکار کا اصل چہرہ عوام کے سامنے آیا۔ پشاور یونیورسٹی میں طلباء پر تشدد اور پولیس گردی کی شدید مزمت کرتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار پختون کمیونٹی دوحہ قطر کے چیئر مین عبد الجنان بنگش نے ایک اخباری بیان میں کیا۔انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی کے اندر طلباء کو تنظیم سازی کا حق آئین دیتا ہے اور طلباء نے یونیورسٹی کے اندر پر امن احتجاج کیا تا ہم اپنے مطالبات کے حق میں آواز اٹھانے والے طلباء پر موجودہ حکومت کی ایما پر طاقت کا استعمال کیا گیا اور طلباء کی آواز دبانے کی کوشش کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے نوجوان نسل کااستعمال کر کے ایوانوں میں پہنچ گئے اوراب انہی نوجوانوں اور مستقبل کے معماروں کو حکومتی پیروں تلے روندنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ عبد الجنان بنگش نے کہا کہ پشاور یونیورسٹی کے اندر جیسی پولیس گردی کا مظاہرہ کیا گیا ایسا واقعہ آج تک کشمیر میں بھی نظر نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ طلباء پر تشدد اور پولیس گردی کی جتنی بھی مزمت کی جائے کم ہے تا ہم موجودہ حکومت اپنی پالیسی پر نظر ثانی کرتے ہوئے طلباء کو جائز حقوق دیں اور پولیس گردی میں ملوث افراد کے خلاف فوری طور پر ایکشن لیکرسخت سے سخت سزا دی جائے۔انہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے طلباء کو جائز حقوق دینے اور کاروائی میں عدم دلچسپی کا مظاہرہ کیا تو طلباء کے ساتھ ساتھ ہم سب احتجاج میں برابر کے شریک ہوں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...