معروف آرٹسٹ کی پینٹنگ 16 کروڑ روپے میں نیلام، لیکن پھر بیچنے کی بجائے فوراً خود ہی پھاڑ ڈالی ، اپنا 16کروڑ کا نقصان کیوں کیا؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے 

معروف آرٹسٹ کی پینٹنگ 16 کروڑ روپے میں نیلام، لیکن پھر بیچنے کی بجائے فوراً ...
معروف آرٹسٹ کی پینٹنگ 16 کروڑ روپے میں نیلام، لیکن پھر بیچنے کی بجائے فوراً خود ہی پھاڑ ڈالی ، اپنا 16کروڑ کا نقصان کیوں کیا؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے 

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک برطانوی آرٹسٹ کی پینٹنگ 10لاکھ 42ہزار پاؤنڈ(تقریباً 16کروڑ 79لاکھ روپے) روپے میں نیلام ہو گئی لیکن اس آرٹسٹ نے اپنا شاہکار فروخت ہونے کے بعد خود ہی پھاڑ ڈالا۔ اب اس نے خود ہی اپنا کروڑوں کا نقصان کروانے کی ایسی وجہ بتا دی ہے کہ ہر سننے والا دنگ رہ جائے۔ میل آن لائن کے مطابق سٹریٹ آرٹسٹ بینکسے (Banksy)کا کہنا ہے کہ ’’اپنے کسی شاہکار کو تباہ کر دینے کی تمنا بذات خود تخلیق کاری کی تمنا ہوتی ہے۔ اس سے مزید بہتر شاہکار بنانے کا حوصلہ ملتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ میں نے اپنی پینٹنگ ’گرل وِد بیلون‘ (Girl with Balloon) فروخت ہونے کے بعد پھاڑ ڈالی تھی۔‘‘

رپورٹ کے مطابق برطانوی شہر برسٹل کے رہائشی بینکسے نے اس پینٹنگ کے فریم میں ایک ریموٹ کنٹرول ڈیوائس نصب کر دی تھی، جس میں کئی بلیڈ لگے ہوئے تھے۔ ریموٹ کے ذریعے ان بلیڈز کو چلا کر پینٹنگ کو ٹکڑے کیا جا سکتا تھا۔ جب یہ پینٹنگ فروخت ہو گئی تو بینکسے نے ریموٹ کا بٹن دبا دیا جس سے پینٹنگ ٹکڑے ہو کر باریک لڑیوں کی شکل میں فریم سے باہر نکلنا شروع ہو گئی۔ یہ منظر دیکھ کر کمرے میں موجود ہر شخص ششدر رہ گیا۔اس کی یہ پینٹنگ ساؤتھ بیز آکشن پر نیلامی میں فروخت ہوئی تھی۔بینکسے کا کہنا تھا کہ ’’یہ پینٹنگ میں نے چند سال قبل بنائی تھی اور اسی وقت اس میں یہ ڈیوائس نصب کر دی تھی تاکہ جب یہ فروخت ہو تو میں اسے پھاڑ سکوں۔‘‘

ویڈیو دیکھیں:

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...