ٹرمپ فون سکینڈل، سی آئی اے نے کریمنل ریفرنس بھیج دیا، ایک اور انٹیلی جنس افسر کی صدر کیخلاف رپورٹ درج

ٹرمپ فون سکینڈل، سی آئی اے نے کریمنل ریفرنس بھیج دیا، ایک اور انٹیلی جنس ...

  

واشنگٹن(اظہر زمان، بیوروچیف) صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر الزام لگا تھا کہ انہوں نے یوکرائن کے صدر پر زور دیا تھا کہ وہ مخالف صدارتی امیدوار جوبائیڈن کو کرپشن میں ملوث کرنے کے مقدمے میں اپنا اثر و رسوخ استعمال کریں۔اس حوالے سے ایک انٹیلی جنس آفیسر نے اپنے محکمے کے انسپکٹر جنرل کو حساس نوعیت کی رپورٹ درج کرائی تھی کہ انہوں نے یہ ٹیلیفون کال سنی تھی جس میں صدر ٹرمپ یوکرائن میں اپنے ہم منصب کو ناجائز اور غیر قانونی طریقے سے قائل کر رہے تھے کہ وہ سابق نائب صدر اور ڈیموکریٹک پارٹی کے اہم صدارتی امیدوار جوبائیڈن اور ان کے ایک بیٹے کے خلاف وہاں قائم کرپشن کے مقدمے کی پیروی کریں اور وعدہ کیا تھا کہ اس کے بدلے میں وہ یوکرائن کی چار سو ملین ڈالر کی امداد بحال کر دیں گے جسے انہوں نے کچھ عرصہ قبل معطل کر دیا تھا۔ اس رپورٹ کے درج ہونے کے بعد سپیکر نینسی پلوسی نے صدر کے خلاف مواخذے کی تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کر دیا تھا۔ معلوم ہوا ہے کہ اس سلسلے میں سی آئی اے نے اس کا باقاعدہ کریمنل ریفرنس تیار کر کے محکمہ انصاف کو بھیج دیا ہے جس کے بعد صدر ٹرمپ پر کریمنل مقدمہ بھی شروع ہو سکتا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اب ایک اور انٹیلی جنس افسر نے بھی پہلے افسر کی شکایت کی توثیق کرتے ہوئے ایک اور شکایت درج کرا دی ہے۔ دوسرے افسر کے وکیل مارک زید نے میڈیا کو بتایا کہ ان کے موکل کو بھی اس فون کال کا براہ راست علم ہے جس کا انہوں نے نام ظاہر نہیں کیا۔ اس دوسری شکایت کے بعد فون کال سکینڈل زیادہ سنگین ہو گیا ہے۔ 

ٹرمپ کال سکینڈل

مزید :

صفحہ اول -