خیبر پختونخوا میں حکومتی عدم دلچسپی کے باعث 600سے زائد صنعتی یونٹس بند 

خیبر پختونخوا میں حکومتی عدم دلچسپی کے باعث 600سے زائد صنعتی یونٹس بند 

  

پشاور (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک) خیبرپختونخوا میں صنعتی یونٹس کے بند ہونے کا سلسلہ رک نہ سکا، حکومتی عدم دلچسپی کے باعث صوبہ بھر میں 6 سو سے زائد صنعتی یونٹس بند ہو گئے، سیکڑوں یونٹس نے اپنا سیٹ اپ ختم کر دیا۔خیبر پختونخوا میں 2 ہزار 982 یونٹس رجسٹرڈ ہیں جن میں سے 2 ہزار 293 یونٹس فعال ہیں، پشاور میں 854 میں سے 751 فعال ہیں جبکہ 105 بند پڑے ہیں، سرحد چیمبر آف کامرس کے مطابق حکومت کو صنعتوں سے متعلق پالیسوں پر نظر ثانی کرنی چاہیئے تاکہ صوبے کی انڈسٹری کو تباہ ہونے سے بچایا جاسکے۔صنعتوں سے وابستہ افراد بھی پریشانی کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا اآئین و قانون کے مطابق اقدامات اٹھائے جائیں تو مشکلات ختم ہوں گی حکومت ٹیکسوں سمیت پالیسیوں میں نرمی کرے۔ خیبرپختونخوا میں صنعتی یونٹس بند ہونے کی بنیادی وجوہات میں وفاق اور صوبائی حکومت کا آڈٹ نظام اور ٹیکسوں میں اضافہ ہے۔

صنعتیں بند

مزید :

پشاورصفحہ آخر -