تنخوا ہوں کی ادائیگی اور برطرفی کی تحقیقات کی جائیں، صوبیدار ربنواز 

    تنخوا ہوں کی ادائیگی اور برطرفی کی تحقیقات کی جائیں، صوبیدار ربنواز 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) ضلع مہمندد تحصیل صافی کے خاصہ داروں نے  وزیر اعظم عمران خان او ر وزیر علیٰ خیبر پختون خوا سے مطالبہ کیا ہے کہ تنخواہوں کی ادائیگی جلد از جلد کرنے سمیت انتظامیہ کی جانب سے بغیر وجہ کے ہمیں نکالنے کی تحقیقات کی جائیں جبکہ ہمارے ساتھ انضمام کے وقت کیے ہوئے وعدوں پر عمل درامد کیا جائے بصورت دیگر اسلام آباد کا رخ کرنے پر مجبور ہونگے    پشاور پریس کلب میں صوبیدار رب نواز،فضل ربی حاجی عسکر اور ظاہر شاہ نے دیگر خاصہ داروں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کہ قبائل اضلاع کو ضم کرنے کے بعد وہاں خاصہ دار فورس کو بے یار و  مددگار چھوڑ دیا گیا جبکہ 1974سے ملکی سرحدوں کے بلا معاوضہ محافظ رہے انہوں نے کہا کہ 2008 تک ہم سے ڈیوٹی لیتے رہے جبکہ  2014میں ہمیں بغیر کسی وجہ کا نکالا گیا اور ہماری جگہ انتظامیہ نے اپنے رشتہ داروں کو بھرتی کیا جبکہ انتظامیہ 2020تک  ہماری تنخواہیں اصول کرتی رہی  اور اپس میں بانٹتے تھیں  انہوں نے کہا کہ کے خاصہ دار  فورس کا انضمام کے بعد پولیس میں ضم کرنا محض دعوے ہے حقیقت میں تحصیل صافی کے خاصہ دار فورس کو  ختم کیا  جبکہ کسی پولی میں ضم نہیں کیا  انہوں نے کہا کہ تحصیل صافی کے خاصہ داروں نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں لازوال قربانیا ں دی ہے اور ان قربانیوں کے بدلے ہمیں اب یہ سلہ ملا ہے کہ ہمیں بغیر کسی وجہ کہ نکال گیا جبکہ موجود انتظامیہ نے اپنے رشتہ دارو ں کو بھرتی کیا جو سراسر ظلم ہے  انہوں نیوزیر اعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ خاصہ دار وں کی تنخواہیں بحال کرنے سمیت انکے ساتھ انضمام کے داوران کیے ہوئے وعدوں کی تکمیل کی جائے  جبکہ انتظامیہ کی جانب سے بھرتی خاصہ داروں کی انکوائری کی جائے بصورت دیگر اسلام آباد میں احتجاجی دھرنا دینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -