انسانی حقوق سے متعلق موبائل ایپ متعارف کرنے کا فیصلہ

  انسانی حقوق سے متعلق موبائل ایپ متعارف کرنے کا فیصلہ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)آئی جی سندھ مشتاق احمد مہر کی زیر صدارت اعلیٰ سطحٰ ویڈیو لنک اجلاس میں صوبائی سطح پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی روک تھام کے حوالے سے وومن پروٹیکشن سیل کے لیئے موبائل ایپ اور ویب پورٹل کی تشکیل اور متعارف کرانیکا فیصلہ کیا گیا۔اس خصوصی ایپ کی تیاری اور متعارف کرانیکا مقصد دراصل انسانی حقوق سے متعلق مختلف نوعیت کے جرائم،خواتین اور بچوں کے خلاف ہونیوالے انتہائی سنگین وگھناؤنے جرائم کا انسداد اور مرتکبین کو قانون کی گرفت میں لاکر انہیں متعلقہ عدالتوں سے مثالی سزاؤں کے عمل کو یقینی بنایا جانا ہے۔تعارفی اجلاس کو ویمن پروٹیکشن سیل کیلئے موبائل ایپ اور ویب پورٹل کے آغاز کے حوالے سے بتایا گیا کہ ویب پورٹل کی تیاری پرکام کیا جاچکا ہے جبکہ پہلے مرحلے میں ویمن پروٹیکشن سیل کی تربیت بھی آئندہ ہفتے سے شروع کی جائیگی۔بعداذاں پائلٹ پروجیکٹ کے طور پر اسکا افتتاح کیا جائیگا۔ اجلاس میں ایڈیشنل آئی جی حیدرآباد، ایڈیشنل آئی جی کراچی،سکھر،لاڑکانہ،شہیدبینظیرآباد،حیدرآباد،میرپورخاص رینج کے ڈی آئی جیز، زونل ڈی آئی جیز کراچی،ضلعی ایس ایس پیز/ایس پیزسندھ نے ذریعہ ویڈیو لنک شرکت کی۔علاوہ اذیں ڈی آئی جی ہیڈکوارٹرزسندھ، ڈی آئی جی انویسٹی گیشن،کرائم سندھ، اے آئی جیز ایڈمن، آپریشنز سندھ، ڈائریکٹر آئی ٹی سی پی او اور ایس پی سہائے عزیز،نزہت شیریں (SCSW)،انیس ہارون(FHRCP)،حیاء ایمان،روبینہ بروہی(PSC)،عالیہ شاہد سیکریٹریWWD اورماروی اعوان کورآرڈینیٹرWCPCنے اجلاس میں براہِ راست شرکت کی۔

مزید :

صفحہ آخر -