چہلم حضرت امام حسینؓ،شرپسند عناصر پرکڑی نظر رکھنے کاحکم، پولیس الرٹ 

چہلم حضرت امام حسینؓ،شرپسند عناصر پرکڑی نظر رکھنے کاحکم، پولیس الرٹ 

  

 ملتان (وقا ئع نگار)  ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس جنوبی پنجاب کیپٹن ر ظفر اقبال کی ہدایت پر جنوبی پنجاب میں امن و امان قائم رکھنے کیلئے چہلم حضرت امام حسین ؓکے موقع پر خصوصی سکیورٹی اقدامات مکمل کرلئے گئے ہیں۔ ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس جنوبی پنجاب نے اپنے ایک حکمنامے میں کہا ہے کہ محرام الحرام میں پولیس نے قیام امن کیلئے بھرپور کردار ادا کیا اب(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

 چہلم حضرت امام حسین کے موقع پر امن و امان یقینی بنانے کیلئے بھی تمام صلاحیتیں استعمال کی جائیں گی۔کیپٹن ر ظفر اقبال نے ملتان،بہاولپور اور ڈیرہ غازی خان کے  ریجنل پولیس آفیسرز کو ہدایت کی ہے کہ حساس مقامات پر سکیورٹی ریڈ الرٹ رکھی جائے اور شرپسند عناصر کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤن عمل میں لایا جائے۔ایڈیشنل آئی جی ساؤتھ پنجاب کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب میں 64 مرکزی جلوس اور 132 مجالس کا انعقاد ہوگا اور حساس مقامات پر پولیس کے 5 ہزار سے زائد جوان ملتان،بہاولپور اور ڈی جی خان رینج میں سکیورٹی فرائض سرانجام دینگے۔کیپٹن ر ظفر اقبال نے واضح کیا کہ مذہبی منافرت اور اشتعال انگیزی کے مرتکب افراد سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا اس حوالے سے تمام اضلاع میں مربوط انفارمیشن سسٹم تشکیل دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ مجالس اور جلوسوں پر سکیورٹی کیمرے اور واک تھرو گیٹس ہر صورت یقینی بنائے جائیں جبکہسٹی پولیس آفیسر ملتان محمد حسن رضا خان نے ڈپٹی کمشنر ملتان محمد عامر خٹک کے ہمراہ سی پی او آفس ملتان میں چہلم  کے موقع پر سیکیورٹی اور امن و امان کے قیام کے حوالے سے مجالس و جلوس کے لائسنس داران اور مذہبی رہنماؤں کے ساتھ میٹنگ کی۔اس موقع پر ایس ایس پی آپریشنز ملتان آصف امین اعوان۔سید علی رضا گردیزی، پروفیسر مظہر حسین گیلانی، اصغر رضا نقوی، مزین عباس چاون، اقتدار حسین نقوی، قمر عباس نقوی، حسن رضا مشہدی، قاضی نادر عباس، غضنفر عباس، مظاہر حسین اور دیگر لائسنس داران اور مذہبی رہنما اور انچارج سیکیورٹی شبانہ سیف بھی ان کے ہمراہ تھیں میٹنگ کے دوران تمام لائسنسداران کے ساتھ چہلم حضرت امام حسین علیہ السلام کے موقع پر سیکیورٹی کے حوالے سے مختلف امور پر مشاورت کی گئی پی او ملتان نے کہا کہ چہلم کے موقع پر فول پروف سکیورٹی کو یقینی بنایا جائے گا۔ امن و امان کو یقینی بنانے کے لیے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ امن و امان اور مسلکی ہم آہنگی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔انہوں نے کہا کہ امن و امان کے قیام میں ہم سب نے مل کر اپنا کردار ادا کرنا ہے ڈپٹی کمشنر ملتان نے کہا کہ چہلم کے موقع پر انتظامیہ کی طرف سے مکمل تعاون فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تمام مسالک کے علماء  اور ضلعی امن کمیٹی کے ممبران امن کے قیام کے لیے کردار ادا کریں۔ہمیں مساجد اور مجالس میں ایسی گفتگو سے اجتناب کرنا ہو گا جس سے کسی دوسرے کی دل آزاری ہو۔اس موقع پر شرکاء  کے مسائل سنے گئے اور ان کے حل کے لیے یقین دہانی کرائی گئی لائسنس داران اور مذہبی رہنماؤں کی طرف سے اس موقع پر امن و امان کے قیام کے لیے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی۔اس بات کی یقین دہانی کرائی گئی کہ مجالس اور جلوسوں کی انتظامیہ ریاست کے احکامات کی پاسداری کرے گی۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -