دینی مدارس نظریہ پاکستان کے محافظ ہیں،محمد حسین محنتی

دینی مدارس نظریہ پاکستان کے محافظ ہیں،محمد حسین محنتی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی سندھ کے امیروسابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ دینی مدارس علم، رشد و ہدایت کا سر چشمہ اور نظریہ پاکستان کے محافظ ہیں۔ رجسٹریشن کے نام پر دینی مدارس اور اساتذہ کو حراساں کرنا قابل مذمت اور دین دشمنی پر مبنی اقدامات ہیں۔ اسلام و کلمہ طیبہ کے نام سے معرض وجود میں آنے والی مملکت خدا داد پاکستان میں مسجد و مدرسہ بنانے پر پابندی جبکہ سینما گھروں سمیت بے حیائی کے فروغ کی حکومتی سرپرستی ریاست مدینہ کے دعویدار حکمرانوں کے دعووں کی نفی ہے۔ علماء کرام منبر و محراب کے پلیٹ فارم کے ذریعہ اتحاد امت، فہم دین اور اقامت دین کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں تاکہ جمہوری، فلاحی و اسلامی پاکستان کے قیام کا حقیقی خواب شرمندہ تعبیر ہو سکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے قباء آڈیٹوریم میں جماعت اسلامی سندھ کی فہم دین کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا۔ جس میں سندھ بھر سے ممتاز علماء کرام دینی اسکالر، دانشور حضرات شریک تھے۔ محمد حسین محنتی نے مزید کہا کہ دینی جماعتوں اور دینی مدارس نے ہمیشہ قومی مفاد کی خاطرحکومت کاساتھ دیا ہے،رجسٹریشن کے حوالے سے بھی دینی مدارس کی ملک گیرتنظیم اتحاد تنظیمات مدارس کے مرکزی قائدین کے وفاقی وزارت تعلیم سے بات چیت کا سلسلہ جاری ہے تاکہ افہام تفہیم کے ساتھ یہ مرحلہ بھی خیروخوبی کے ساتھ حل ہوسکے مگر اس کے باوجودینی مدارس میں روڑے اٹکانہ کہاں کی دانشمندی ہے۔

مزید :

صفحہ اول -