اپوزیشن کی گرفتاریاں حکومتی ناکامی کا کھلا ثبوت ہے، احسان الحق باجوہ

اپوزیشن کی گرفتاریاں حکومتی ناکامی کا کھلا ثبوت ہے، احسان الحق باجوہ
اپوزیشن کی گرفتاریاں حکومتی ناکامی کا کھلا ثبوت ہے، احسان الحق باجوہ

  

دبئی (طاہر منیر طاہر) سیاسی گرفتاریاں اور اپوزیشن پر دباﺅ اس بات کی واضح نشانی ہے کہ موجودہ حکومت اب بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے اور محض اپنی کرسی بچانے کے لیے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔ اپوزیشن رہنماﺅں پر جعلی مقدمات اور سیاسی قائدین کی گرفتاریاں اپوزیشن اور حق بات کو دبانے کے مترادف ہے، ان خیالات کا اظہار پاکستان مسلم لیگ ن گلف و مڈل ایسٹ کے صدر ایم این اے چودھری احسان الحق باجوہ نے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم شہباز شریف کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ شہباز شریف سمیت تمام سیاسی امیروں کو فی الفور رہا کیا جائے اور ان کے خلاف قائم مقدمات کو ختم کیا جائے۔

چودھری احسان الحق باجوہ نے کہا کہ جمہوریت کا حسن یہ ہے کہ اپوزیشن کی باتوں کو سنا اور برداشت کیا جائے لیکن پی ٹی آئی کی حکومت میں صبر نام کی کوئی چیز نہیں ہے، وہ سیاسی تنقید کو برداشت کرنے کی بجائے اپوزیشن کی آواز کو دبارہے ہیں اور ان پر جعلی مقدمات بنا کر جیلوں میں دھکیل رہے ہیں جو جمہوریت نہیں بلکہ آمریت کی نشانی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی گرفتاریاں سیاسی ورکرز کا حوصلہ بڑھاتی ہیں اور وہ مزید کھل کر جرأت سے کام کرتے ہیں۔

پی ایم ایل این کے لیڈران گرفتاریوں سے نہیں ڈرتے جبکہ سیاسی لوگوں کی گرفتاریوں سے لوگوں کے دلوں میںان کے لیے ہمدردیاں بڑھ رہی ہیں جس سے پی ایم ایل این کا ووٹ بنک بڑھ رہا ہے اور پی ایم ایل این لوگوں میں مقبول ہورہی ہے۔ سیاسی گرفتاریاں سچ کو دبا نہیں سکتیں اور نہ ہی کسی کی زباں بندی کی جاسکتی ہے۔

احسان الحق باجوہ نے مسلم لیگ ن گلف و مڈل ایسٹ کی طرف سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک میں جلد از جلد عام انتخابات کرائے جائیں تاکہ عوام کی من پسند جمہوری حکومت سامنے آئے کیونکہ موجودہ حکومت کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے پاکستان کے لوگ شدید تنگ آچکے ہیں اور ملک میں بڑی تبدیلی چاہتے ہیں۔

مزید :

عرب دنیا -تارکین پاکستان -