عمران خان نے ڈی جی ایف آئی اے کو بلا کر خواجہ آصف کیخلاف غداری کا مقدمہ بناﺅ تو افسر نے آگے سے کیا جواب دیا ؟ شاہد خاقان عباسی نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا 

عمران خان نے ڈی جی ایف آئی اے کو بلا کر خواجہ آصف کیخلاف غداری کا مقدمہ بناﺅ ...
عمران خان نے ڈی جی ایف آئی اے کو بلا کر خواجہ آصف کیخلاف غداری کا مقدمہ بناﺅ تو افسر نے آگے سے کیا جواب دیا ؟ شاہد خاقان عباسی نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاہے کہ میں بھی ایک پرچہ درج کروانا چاہتاہوں ، لاہور جارہاہوں اور پھر شاہدرہ بھی جاﺅں گا ، میرا پرچہ عمران خان کے خلاف ہے ،سابق ڈی جی ایف آئی اے کو عمران خان نے بلا کر کہا کہ نوازشریف ، مریم نواز اور کیپٹن صفدر سمیت دیگر پر مقدمے کر کے اندر کرو ، افسر نے جواب دیا کہ آپ کے پاس نیب موجود ہے ،وہ کام بڑا اچھا کر رہی ہے آپ مجھے کیوں کہہ رہے ہیں ۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہناتھا کہ میں ٹی وی پر دیکھا ہے کہ پاکستان کے ڈی جی ایف آئی اے ایک فرض شناس پولیس افسر 35 سال کی سروس کے بعد ریٹائر ہواہے ، اس نے کھلم کھلا کہاہے کہ مجھے وزیراعظم نے بلا کر کہا کہ نوازشریف ،مریم نواز ، کیپٹن صفدر اور دوسرے افراد پر پرچے بناﺅ اور انہیں اندر کرو۔

شاہد خاقان عباسی کا کہناتھا کہ افسر نے کہا کہ مجھے وزیراعظم نے کہا کہ خواجہ آصف پر آرٹیکل چھ کا پرچہ بناﺅ، غداری کا پرچہ بناﺅ، آپ کو سمجھ آئی غداری کہاں سے شروع ہوئی ہے ، جس آدمی کی ذہنی کیفیت یہ ہو ، جس کو اپنے آئنی حلف کی پرواہ نہ ہو ،جس کو آرٹیکل 62 اور 63 کی پرواہ نہ ہو، ،جسے عہدے کی پرواہ نہ ہو، جس میں اتنی ہمت ہو کہ قانون کو جھٹلائے اور ایک اعلیٰ ترین سرکاری افسر کو بلائے اور اسے کہے کہ تم دوسرے لوگوں پر جھوٹے پرچے بناﺅ، غداری کے مقدمے بناﺅ، انہیں اندر کرو۔شاہد خاقان عباسی کا کہناتھا کہ اس افسر نے عمران خان کو جواب دیا کہ آپ کے پاس نیب موجود ہے ،وہ کام بڑا اچھا کر رہی ہے آپ مجھے کیوں کہہ رہے ہیں ۔

مزید :

قومی -