سارہ انعام قتل کیس ، مرکزی ملزم شاہنواز کی والدہ کی عبوری ضمانت میں توسیع 

سارہ انعام قتل کیس ، مرکزی ملزم شاہنواز کی والدہ کی عبوری ضمانت میں توسیع 
سارہ انعام قتل کیس ، مرکزی ملزم شاہنواز کی والدہ کی عبوری ضمانت میں توسیع 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) اسارہ انعام قتل کیس میں اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن  کورٹ نے مرکزی ملزم شاہنواز امیر کی والدہ  ثمینہ شاہ کی عبوری ضمانت میں توسیع کر دی ۔

ثمینہ شاہ اپنے وکیل کے ساتھ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد میں پیش ہوئیں ،  ایڈیشنل سیشن جج شیخ سہیل کے چھٹی پر ہونے کے باعث  سماعت بغیر کارروائی کے ملتوی کر  دی گئی ۔ عدالت کی جانب سے آج مدعی مقدمہ کے وکیل سے دلائل طلب کئے گئے تھے ۔

خیال رہے کہ  گزشتہ روز  سارہ انعام قتل کیس میں مرکزی ملزم شاہنواز امیر کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا  تھا ۔  تین روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر پولیس کی جانب سے شاہنواز امیر کو سینئر سول جج محمد عامر عزیز کی عدالت میں پیش کیا گیا ، پولیس کی جانب سے ملزم کے جوڈیشل ریمانڈ کی استدعا کی گئی جس پر عدالت نے ملزم کو  14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔ 

واضح رہے کہ ایاز امیر کے بیٹے شاہنواز نے اپنی اہلیہ کو گھر میں قتل کر دیا  تھا ۔ شاہنواز امیر نے شراب نوشی اور چرس پینے کا اعتراف  بھی کیا ۔ دوران تفتیش اعتراف کیا ہے کہ وہ شراب نوشی اور چرس بھی پیتا رہا جبکہ وقوعہ کے وقت گرفتاری کے موقع پر ملزم نشے میں نہیں تھا۔

ملزم شاہنواز امیر نے مقتولہ سے 48 ہزار درہم لے کر مرسڈیز کار خریدی، ملزم نے اپنی مقتولہ اہلیہ سے مرسڈیز کار لینے کا دوران تفتیش اعتراف کیا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -