"ڈیلی پاکستان" کی کاوش رنگ لے آئی، تھانے میں شہری پر بہیمانہ تشدد کرنے والے ایس ایچ او کو سزا مل گئی

"ڈیلی پاکستان" کی کاوش رنگ لے آئی، تھانے میں شہری پر بہیمانہ تشدد کرنے والے ...

  

 لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )"ڈیلی پاکستان"  کی جانب سے تھانے کے اندر شہری پر بہیمانہ تشدد کی ویڈیو منظر عام پر لائے جانے کے بعد اعلیٰ پولیس حکام حرکت میں آ گئے ہیں اور متعلقہ ایس ایچ او کو معطل کرتے ہوئے اس کے  خلاف محکمانہ کارروائی شروع کر دی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق ڈیلی پاکستان کی جانب سے گزشتہ روز سوشل میڈیا پر اس معاملے کو اٹھایا گیا جس کی ویڈیو میں صاف دیکھا جا سکتاہے کہ تھانے میں اخلاقیات اور قانون سے مکمل ناواقف ایک ایس ایچ او حراست میں موجود شہری پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہاہے ، تاہم ابھی یہ وجہ سامنے نہیں آ سکی ہے کہ وہ پولیس افسر اپنی انا کی تسکین یا پھر کس مقصد کیلئے متاثرہ شخص کو اپنے قہر کا نشانہ بنا رہاہے ۔

"ڈیلی پاکستان"  کی اس بے لوث کاوش کے باعث متاثرہ شخص کی آواز پولیس کے اعلیٰ حکام تک پہنچ گئی جنہوں نے اب نوٹس لیتے ہوئے لاہور کے علاقے بادامی باغ کے ایس ایچ او کو معطل کر دیاہے ۔ پنجاب پولیس کے ٹویٹر اکاﺅنٹ سے جاری بیان میں کہا گیاہے کہ ”اس افسوسناک واقعہ میں ملوث ایس ایچ او بادامی باغ آصف جبار کو نہ صرف معطل کر دیا گیا بلکہ اس کے خلاف محکمانہ کارروائی کا آغاز بھی کر دیا گیا ہے ، انکوائری رپورٹ کی روشنی میں مزید ایکشن لیا جائے گا۔“

ویڈیو میں دیکھا جا سکتاہے کہ یہ ایس ایچ او شہری کو کبھی کتا بننے پر مجبور کرتاہے اور پھر اسے کتے کی طرح آوازیں نکالنے کا کہتاہے ، بیچارہ مجبور شخص اپنی جان بچانے کیلئے پولیس افسر کے ہر ناجائز اور غیر قانونی حکم کے آگے سر تسلیم خم کیے ہوئے ہےجبکہ ایک مقام پر تو ایس ایچ او متاثرہ شخص سے یہ بھی پوچھتا ہے کہ ’ تو کس نسل کا کتا ہے‘۔پولیس افسر نے تمام تر اخلاقیات اور پولیس ایکٹ کے تحت اٹھائے گئے حلف کی دھجیاں اڑاتے ہوئے تھانے کو اپنی جاگیر سمجھ رکھاہے اور جس پرُ اعتمادی کے ساتھ وہ یہ سب انجام دے رہاہے اس کی کوئی نظیر ہی نہیں ملتی ۔

مزید :

قومی -