صوبائی دارالحکومت ،بلدیاتی امیدواروں کی بھرمار،(ن)لیگ ،پی ٹی آئی کو پریشانی کا سامنا

صوبائی دارالحکومت ،بلدیاتی امیدواروں کی بھرمار،(ن)لیگ ،پی ٹی آئی کو پریشانی ...

لاہور(جاوید اقبال) صوبائی دارالحکومت میں ممکنہ بلدیاتی انتخابات میں امیدواروں کے چناؤ میں مسلم لیگ(ن) اورتحریک انصاف کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ہر یونین کونسل میں چئیرمین اوروائس چئیرمین کے عہدوں کیلئے کئی کئی امیدوار سامنے آگئے ہیں۔جنہوں نے اپنی اپنی الگ سے انتخابی مہم شروع کردی ہے۔جس سے دونوں جماعتوں میں ہر یونین کونسل کے اندرکئی کئی گروپ سامنے آگئے ہیں۔زیادہ مشکلات مسلم لیگ(ن) لاہورکو پیش آرہی ہیں۔مسلم لیگ(ن) کے ہریونین کونسل میں لاہورتنظیم ،رکن پنجاب اسمبلی،رکن قومی اسمبلی اورہر حلقہ کی تنظیم اپنے اپنے من پسند امیدواروں کو گرین سگنل دے رہے ہیں،جس سے چئیرمین اوروائس چئیرمین کے عہدوں کیلئے کئی کئی میدان میں آنکلے ہیں۔سب سے زیادہ امیدوار شمالی لاہور اورجنوبی لاہور کی یونین کونسل میں سب سے زیادہ گہما گہمی ہے۔اورایک ایک یونین کونسل پر چئیرمین اوروائس چئیرمین کے کئی کئی امیدوار ایک دوسرے کے سامنے آچکے ہیں۔بتایا گیا ہے کہ صوبائی دارالحکومت کی تمام یونین کونسلوں میں سے 80فیصد یونین کونسل پر آئندہ دنوں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کیلئے مسلم لیگ(ن) اورتحریک انصاف کی طرف سے ایک ایک یونین کونسل میں 10سے12تک چئیرمین اوروائس چئیرمین کی سیٹوں پر امیدوار سامنے آچکے ہیں۔جس سے دونوں جماعتوں کی لاہورتنظیموں کو سخت مسائل ومشکلات کا سامنا ہے۔ان میں سے زیادہ تر امیدوار بے چین ہیں کہ وہ بطور چئیرمین اوروائس چئیرمین انتخابات میں ’’میدان‘ِ‘ میں آرہے ہیں۔اوراگر جماعتوں نے ان کو بطور امیدوار ’’قبول ‘‘ نہ کیا تو وہ آذاد حیثیت میں انتخابات میں حصہ لیں گے۔اورپارٹی امیدواروں کے مقابلے میں میدان میں اتریں گے۔اس صورتحال نے لاہور میں دونون جماعتوں کی تنظیموں نے اپنی پارٹی قیادت کو آگاہ کر دیا ہے۔اس سلسلے میں مسلم لیگ(ن) لاہورتنظیم نے صورتحال کے بارے حمزہ شہباز کو رپورٹ پیش کردی ہے،جو حتمی امیدواروں کی فہرست جاری کرنے سے قبل ’’سامنے‘‘ آتے ہوئے دیگر امیدواروں سے ملاقات کر کے انہیں راضی کریں گے۔دوسری طرف ذرائع نے بتا یا ہے کہ تحریک انصاف لاہور میں عبدالعلیم خان ،میاں محمودالرشید ،میاں اسلم اقبال اوراعجاز چوہدری گروپوں کے اپنے اپنے حمایت یافتہ امیدوار میدان میں ہیں اورایک دوسرے کے خلاف امیدواربن کر سامنے آچکے ہیں۔اس صورتحال کے باعث تحریک انصاف کو خاصی مشکلات کا سامنا ہے۔اس حوالے سے مسلم لیگ(ن) لاہور کے صدرپرویز ملک کا کہنا ہے کہ گھر کی بات گھر کے اندر طے کریں گے۔ابھی میدان نہیں لگاجب لگے گا تو ہر یونین کونسل میں مسلم لیگ (ن) کی طرف سے ہر عہدے کیلئے ایک ایک امید وار ہی نظر آئے گا۔اورلاہور میں بلدیاتی انتخابات میں ایک بار پھر مسلم لیگ(ن) ہی کلین سویپ کرے گی۔اس حوالے سے تحریک انصاف لاہور کے راہنما عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ بلدیاتی انتخابات میں لاہورکے اندر مسلم لیگ(ن) کو ٹف ٹائم دیں گے۔چھوٹے موٹے اختلافات ہر پارٹی میں ہوتے ہیں۔بلدیاتی ’’میدان‘‘ ابھی لگا نہیں ،جب لگے گا تو ہر یونین کونسل میں تحریک انصاف ہی ہر طرف نظر آئے گی۔ہمارے امیدوار ابھی درخواستیں دے رہے ہیں ،جب فیصلے آئیں گے تو اس فیصلے کو پارٹی کا ہر رکن تسلیم کرے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...