65ء کی جنگ میں سب سے بڑا ہتھیار قومی جذبہ اور اتحاد تھا،ناصرخان

65ء کی جنگ میں سب سے بڑا ہتھیار قومی جذبہ اور اتحاد تھا،ناصرخان
65ء کی جنگ میں سب سے بڑا ہتھیار قومی جذبہ اور اتحاد تھا،ناصرخان

  


جوہانسبرگ(بیورورپورٹ) صدر پاکستان ساؤتھ افریقہ ایسوسی ایشن ناصر خان نے کہا کہ ستمبر جنگ میں ہمارا سب سے بڑا ہتھیار اتحاد اور قومی جذبہ تھا، آج تعمیر پاکستان کیلئے اسی قومی جذبہ اور حب الوطنی کے مظاہرے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ دفاع وطن کیلئے جان دینے والے بری، بحری، فضائی جوانوں اور افسروں کی عظیم قربانیوں کی وجہ سے آج پاکستانی عوام آزاد فضاؤں میں سانس لے رہے ہیں۔روزنامہ پاکستان کے بیوروچیف ندیم شبیر سے گفتگو کرتے ہوئے ناصر خان نے کہا کہ پاکستان شہیدوں، غازیوں کی امانت ہے ہر شہری اس سے پیار کرے اور اس خطہ زمین کی قدر کرے۔ انہوں نے کہا کہ فوری انصاف مہیاکرنے کیلئے افواج پاکستان کی طرف سے فوجی عدالتوں کے قیام کی وجہ سے عوام نے سکھ کا سانس لیا ہے، قوم سمجھتی ہے کہ پاک افواج قومی یکجہتی اور استحکام کے ضامن ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...