تہاڑ جیل میں قید مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوانوں نے بھوک ہڑتال شروع کردی

تہاڑ جیل میں قید مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوانوں نے بھوک ہڑتال شروع کردی

سری نگر/ نئی دہلی ( اے این این ) تہاڑ جیل میں قید مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوانوں نے بھوک ہڑتال شروع کردی ٗ حالت ابتر ہونے لگی ٗ لواحقین کا سری نگر پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ ٗ دونوں نوجوانوں کو فی الفور مقبوضہ کشمیر منتقل کرنے کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق تہاڑ جیل میں قید مقبوضہ کشمیر کے دو نوجوانوں نے بھوک ہڑتال شروع کردی ہے جس کے باعث ان کی حالت تشویشناک حد تک بگڑنے لگی ہے ۔ ان دونوں نوجوانوں کے لواحقین نے گزشتہ روز سری نگر پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا انہیں سرینگر سنٹرل جیل منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ۔پریس کالونی میں گزشتہ روز اس وقت رقعت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے جب تہار جیل میں مقید مشتاق احمد لون ولد عبدالحمیداور مظفر احمد ڈار ولد عبدالخالق کے لواحقین نے دھرنا دیا اور مطالبہ کیا کہ انہیں سرینگر منتقل کیا جائے ۔انہوں نے بتایا کہ مذکورہ نوجوان تہار جیل میں بند ہیں جہاں انہیں اذیتیں دی جارہی ہیں اور انہیں عدالت میں پیش نہیں کیا جاتا ہے ۔اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈ لئے احتجاجیوں نے بتایا کہ اب مذکورہ نوجوانوں نے جیل میں ہی بھوک ہڑتال شروع کی گئی جس کی وجہ سے ان کی حالت ابتر ہوتی جارہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ گذشتہ کئی دنوں سے بھوک ہڑتال پر بیٹھنے کے باوجود بھی انہیں عدالت کے سامنے پیش نہیں کیا جاتا ہے ۔

مزید : عالمی منظر


loading...