زمیندار کا مزار عہ اور اسکی بیوی پر تشدد 4 ماہ کا حمل ضائع مقدمہ درج نہ ہو سکا

زمیندار کا مزار عہ اور اسکی بیوی پر تشدد 4 ماہ کا حمل ضائع مقدمہ درج نہ ہو سکا

لاہور(کر ائم سیل)با اثر چوہدری کا مزارعے اور اس کی بیوی پر تشدد ،4ماہ کا حمل ضائع کر دیا۔مقامی پولیس انصاف دینے میں ناکام متاثرہ خاندان انصاف کے حصول کے لیے آئی جی آفس پہنچ گیا ۔تفصیلا ت کے مطابق کوٹ فتوکے ضلع قصور کے رہائشی محمد رمضان اور اس کی بیوی جمیلہ نے روز نامہ’’پاکستان‘‘سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ ہم علاقہ کے چو ہدری رانا محمد ارشاد اور سیف کے ڈیرے پر ملازم تھے ہم نے ملازمت چھوڑنے کاکہا تو رانا ارشاد نے سیف کے ساتھ مل کر ہمیں تشدد کا نشانہ بنایا جس سے جمیلہ کا 4ماہ کا حمل ضائع ہو گیا۔ہم نے ملزمان کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دی تو پولیس نے ہمارا مقدمہ درج نہیں کیا۔ملزمان نے ہمیں تنخواہ دینے کی بجائے ہمارا 9لاکھ کا سامان رکھ لیا اور الٹا ملزمان اپنا اثرورسوخ استعمال کر کے ہم پر چھوٹے مقدمات درج کر وا رہے ہیں۔ہماری اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کے ہمیں انصاف فراہم کیا جا ئے ۔

مزید : علاقائی


loading...