ٹیکس لگنے سے درآمد میں مزید کمی ،ایل پی جی لوکل مافیا کا ہفتے میں تسیرا وار ،5روپے فی کلو اضافہ

ٹیکس لگنے سے درآمد میں مزید کمی ،ایل پی جی لوکل مافیا کا ہفتے میں تسیرا وار ...

  

لاہور(خبرنگار) ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے 5روز میں گیس کی قیمتوں میں تیسرا بے بنیاد اضافہ کر دیا۔ ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے تیسری بار اوگرا کے نوٹیفیکیشن کے بغیر ایل پی جی کی قیمت میں 5روپے فی کلو اضافہ کر دیا ہے جس کے بعد 50روپے گھریلو سلنڈر، 200روپے کمرشل سلنڈر کی قیمت میں بلاجوازاضافہ کر دیا گیا ہے ۔ حکو مت نے ایل پی جی کی قیمتیں مستحکم رکھ کر غریب صارفین کو ریلیف دیا لیکن ایل پی جی کے طاقتور مافیا نے گیس کی درآمد کوعملی طور پر سود مند نہ ہونے دیادیااور ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے ریلیف دینے کے بجائے بلیک مارکیٹنگ کر کے ناجائز منافع خوری شروع کر دی۔ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن پاکستان کے چےئرمین عرفان کھوکھر نے کہا ہے کہ ایل پی جی کے طاقتور ما فیا نے ایل پی جی کی درامد پر ٹیکس لگوا کر گیس کی درآمد کوعملی طور پر سود مند نہ ہونے دیا جسکی وجہ سے ایل پی جی ایمپورٹر نے گیس کی درآمد کم کر دی ۔ ایل پی جی کی درآمد میں کمی کے نتیجہ میں آج لوکل اور ایمپورٹڈ گیس کی قیمت میں 16سے 20 روپے فی کلو کا فرق ہے۔ ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے اوگرا کے نوٹیفیکیشن کے بغیر پانچ روز میں تین بار ایل پی جی کی قیمتوں میں بلاجواز اضافہ کر کے اوگرا قانون کی دھجیاں بکھیر دیں۔ چند عناصر حکومت کی بدنامی کا باعث بن رہیں ہیں۔اگر وزیر اعظم صاحب نے گیس کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کا نوٹس لیکر زمہ داروں کو کیفر کردار تک نہ پہنچایا تو آئندہ سردیوں میں ایل پی جی کی قیمتیں تاریخ کی بلند رترین سطح پر ہو گیں۔ ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں کے ہاتھوں ڈسٹری بیوٹرز مہنگی گیس لینے پر مجبور ہے۔ ہماری وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف، وزیر پیٹرولیم شاہد خاقان عباسی، وزارت پیٹرولیم، چےئرپرسن اوگرا سے اپیل ہے کہ ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں کا ناجائز قیمتوں میں بلاجواز اضافہ کرنے پر سخت سے سخت نوٹس لیا جائے۔ اگر فوری ایکشن نہ لیا گیا تو گیس پے در پے مہنگی ہوتی جائے گی اور حکومت بدنام ہوتی جائے گی۔شہروں کی قیمتیں مندرجہ ذیل ہیں۔کراچی 80روپے فی کلو،910روپے گھریلو سلنڈر۔لاہور، گوجرانوالہ، گجرات، فیصل آباد، جہلم، قصور، ساہیوال، سیالکوٹ، ڈسکہ، پشاور 85روپے فی کلو،970روپے گھریلو سلنڈر۔ رحیم یار خان، صادق آباد، حیدر آباد، ، اٹک ، میرپور آزاد کشمیر90روپے فی کلو، 1030روپے گھریلو سلنڈر۔ راولپنڈی ، اسلام آباد، ایبٹ آباد،مظفر آباد، باغ، فاٹا، کوٹلی، ٓآزادکشمیر، ٹنڈو محمد خان، ٹنڈو اللہ یار، میر پور خاص، عمر کوٹ، نواپ شاہ، منباری، ٹھٹہ، دادو، جام شورو، شکار پور 95۱روپے فی کلو1090روپے گھریلو سلنڈر۔گلگت بلتستان، مری،نتھیا گلی، بالاکوٹ،105روپے کلو،1210روپے گھریلو سلنڈر ہے۔

مزید :

علاقائی -