آخری پروازوں سے جانیوالے عازمین حج کو جدہ پہنچنے پر شدید مشکلات کا سامنا

آخری پروازوں سے جانیوالے عازمین حج کو جدہ پہنچنے پر شدید مشکلات کا سامنا

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)فریضہ حج کی ادائیگی کیلئے آخری فلائٹوں سے پاکستان سے جانیوالے جدہ پہنچنے والوں کو امیگریشن میں12سے پندرہ پندرہ گھنٹے خواری کرنے کا سامنا کرنا پڑا ہے ،چار پانچ اور چھ ستمبر کو لاہور ،کراچی،پشاور،اسلام آباد،سے پہنچنے والے پرائیویٹ سکیم کے با لخصوص اور سرکاری سکیم کے عازمین کو با لعموم سخت دشواری کا سامنا کرنا پڑا ہے، جہاز سے اترنے کے بعد امیگریشن مکمل کرتے ہوئے جدہ کیلئے بسوں میں سواری کیلئے کم ازکم 12گھنٹے اور جدہ سے مکہ کیلئے 3گھنٹے میں پہنچ پائے اس طرح پاکستان سے جانیوالے عازمین حج کو کم ازکم 20گھنٹے کی سخت دشواری کا سامنا کرنا پڑا اور انہیں بھوکے پیاسے رہنا پڑا عازمین حج نے وزارت مذہبی امور حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ سعودی حکومت سے کہا جائے کہ جدہ میں آمد کے موقع پر عازمین حج کی عزت اور تقویم کا خیال کرتے ہوئے امیگریشن کے معاملات کو آسان اور جلدی کرنے کے انتظامات کیے جائیں ،عازمین حج کو جہازوں سے اتار کر 6سے7 گھنٹے بڑے ہالوں میں بند کر دیا جاتا ہے جہاں انہیں نہ پینے کے لیے پانی مل سکتا ہے اور نہ کھانے کیلئے اور نہ کسی چیز کی خریداری کا انتظام ہوتا ہے۔

عازمین حج

مزید :

صفحہ آخر -