بھتہ خوری کا جعلی مقدمہ درج کرنے پر ایس ایچ او سے ریکارڈ طلب

بھتہ خوری کا جعلی مقدمہ درج کرنے پر ایس ایچ او سے ریکارڈ طلب

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس وقار احمدسیٹھ اور جسٹس مسرت ہلالی پرمشتمل دورکنی بنچ نے تین شہریوں کے خلاف بھتہ خوری کاجعلی مقدمہ درج کرنے پر تھانہ تخت بھائی کے ایس ایچ او کونوٹس جاری کرکے مقدمے کاریکارڈ مانگ لیاہے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز امین الرحمان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائراکرام وغیرہ کی رٹ پٹیشن پر جاری کئے اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار ٹی ایم اے تخت بھائی میں بحیثیت سپروائزر تعینات ہے اوران ظفرخان کے ساتھ رقم کا تنازعہ چلاآرہا تھااورایک موقع پرظفرخان نے ا پنی گاڑی بطورضمانت اس کے حوالے کی اورگاڑی خودحوالے کرنے کے بعد الٹاان کے خلاف بھتہ خوری کامقدمہ درج کرلیاہے جبکہ مدعی ظفرخان کادیگرافراد کے ساتھ بھی رقم کے تنازعات ہیں اورپولیٹکل انتظامیہ نے بھی اسے 25 جولائی 2016ء کو طلب کیاتھااس بناء درخواست گذاروں کے خلاف مقدمے کاکوئی جوازنہیں بنتالہذااسے کالعدم قرار دیا جائے فاضل بنچ نے ابتدائی دلائل کے بعد ایس ایچ او کو ریکارڈ سمیت طلب کرلیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -