لینڈ ریکارڈ سنٹر ملتان ‘ درجنوں مواضعات کمپیوٹرائزڈ ہونے کے باوجود آن لائن نہ ہو سکے

لینڈ ریکارڈ سنٹر ملتان ‘ درجنوں مواضعات کمپیوٹرائزڈ ہونے کے باوجود آن لائن ...

  

ملتان(خبر نگار) لینڈ ریکارڈ سنٹر ملتان میں افسران کی سستی اور عدم دلچسپی کے باعث ابھی تک درجنوں مواضعات کمپوٹرائز ڈ ہونے کے باوجود آن لائن نہیں کئے جاسکے ہیں جس کی وجہ سے نہ صرف سرکار کو کروڑوں روپے کا ماہانہ نقصان پہنچایا جارہا ہے بلکہ پٹواریوں کی لوٹ مار کا سلسلہ بد دستور جاری ہے لینڈ ریکارڈ میں کسانوں کاشتکاروں او رزمینداروں کے مسائل کافی زیادہ ہوگئے ہیں (بقیہ نمبر5صفحہ12پر )

حالیہ حکومت کی سکیموں میں کسانوں کو اپنی زرعی اراضی کا ریکارڈ تک نہیں دیا جارہا ہے جس کی وجہ سے وزیر اعظم اور خادم پنجاب کا کسان پیکیج پروگرام بری طرح ناکام کرنے کی سازش کی جارہی ہے کسانوں کو اپنی اراضی کاثبوت دینے کے لئے فردملکیت تک جاری نہیں کی جارہی ہے اس کی وجہ موضع آن لائن نہیں کیا گیاہے ملتان تحصیل صدر کا موضع قصبہ ثانی گزشتہ ایک سال سے کمپوٹرائز ڈ نہیں کیا جارہا ہے جس کی وجہ سے مزکورہ موضع کے کسان تنگ آچکے ہیں اس حوالے سے متعلقہ پٹواری کا کہنا ہے کہ ان کی طرف سے ریکارڈ لینڈریکارڈ سنٹرملتان کے حوالے کردیاگیاہے جوکہ آن لائن نہیں کیا جارہا ہے جبکہ لینڈریکارڈ سنٹرکے حکام کاکہنا ہے کہ اے سی صدر ہی مجاز افسر ہیں جوکہ آن لائن کرواسکتے ہیں ان کی ہدایت کے مطابق مزکورہ موضع آن لائن ہونا ہے۔

لینڈ ریکارڈ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -