پی ٹی آئی،طاہر القادری بھی حکومت کی طرح سرائیکی صوبے کے دشمن ہیں،غلام فرید کوریجہ

پی ٹی آئی،طاہر القادری بھی حکومت کی طرح سرائیکی صوبے کے دشمن ہیں،غلام فرید ...

  

احمدپورشرقیہ، ہیڈ پنجند (نامہ نگار) پی ٹی آئی اور طاہرالقادری بھی حکومت کی طرح سرائیکی صوبے کے دُشمن ہیں۔ عید کے بعد آل پارٹیز سرائیکی کانفرنس بلائی جائے گی اور سرائیکی وسیب کے ممبران پارلیمنٹ کے گھروں کا گھیراؤ کیاجائے گا۔ اس امر کا انکشاف سرائیکستان قومی اتحاد کے سربرا ہ خواجہ غلام فرید کوریجہ نے پاکستان سرائیکی پارٹی کے مرکزی جنرل سیکریٹری محمد اکبر انصاری ایڈووکیٹ کے (بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

ہمراہ احمدپورشرقیہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کی بالادستی ختم ہوچکی ہے۔ اب وہ پنجاب ہاؤس بن چکی ہے ۔ لاہور برانڈ جمہوریت قابل قبول نہیں ۔ ملک میں دائیں بازو کی جماعت کی حکمرانی ہے اور اپوزیشن نے بھی وہی کام شروع کررکھا ہے۔ روشن خیال اور ترقی پسندوں کو 70 سالوں سے دبایا جارہا ہے۔ انقلاب عوام کے بغیر ممکن نہیں۔ پی ٹی آئی اور طاہر القادری کے ایجنڈے میں سرائیکی صوبہ شامل ہی نہیں ہے۔ اسلئے ان کے خلاف بھی سرائیکی قوم متحد ہوجائے اور آئندہ الیکشن میں تمام سرائیکی قومیں متحد ہوکر الیکشن میں حصہ لیں گی اور کامیاب ہوکر صوبے کا حق حاصل کرکے رہیں گی۔ اکبر انصاری ایڈووکیٹ نے کہا کہ اسمبلی میں قرارداد اور انتخابی وعدے کے بعد نوازشریف کی جانب سے سرائیکی صوبہ نہ بنانے سے واضح ہوگیا ہے کہ نوازشریف صادق اور امین نہیں رہے اسلئے ان کے خلاف ریفرنس دائر کیا جارہا ہے۔ اس موقع پر یاسر انصاری۔ استاد رمضان حسین خان۔ رفیق سومرو ایڈووکیٹ۔ طارق لودھی ایڈووکیٹ و دیگر بھی موجود تھے۔

غلام فرید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -