رکشہ ڈرائیور نے ایمانداری کی نئی مثال رقم کر دی ، مالک سے بچھڑنے کے باوجود قربانی کے بکرے لیکر تھانے پہنچ گیا ،پولیس نے بکرے مالک کے حوالے کردیے

رکشہ ڈرائیور نے ایمانداری کی نئی مثال رقم کر دی ، مالک سے بچھڑنے کے باوجود ...
رکشہ ڈرائیور نے ایمانداری کی نئی مثال رقم کر دی ، مالک سے بچھڑنے کے باوجود قربانی کے بکرے لیکر تھانے پہنچ گیا ،پولیس نے بکرے مالک کے حوالے کردیے

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) لاہور میں رکشہ ڈرائیور نے ایمانداری کی ایسی مثال قائم کردی جسے سن کر ہر مسلما ن کا سر فخر سے بلند ہو گیا ، یاسر نامی شہری کے بکرے لیکر تھانے پہنچ گیا جہاں پولیس نے بکرے مالک کے حوالے کر دیے ۔

جیو نیوز کے مطابق یاسر نامی شہری نے شاہ پور کانجراں سے رات گئے قربانی کیلئے دو بکرے خریدے اور انہیں گھر لیجانے کیلئے رکشہ لیا ، شہری اپنے دونوں بکرے رکشے پر لاد کر خود اپنی کار میں سوار ہو گیا اور رکشے ڈرائیور سے کہا کہ تم آگے چلو میں پیچھے پیچھے آتا ہوں ۔

سردیوں کی آمد آمد ، گاڑی کو سٹارٹ کرنے کیلئے دھکا لگوانے کی بجائے یہ ایک کام کریں لیکن برانڈ کے بارے میں جاننے کیلئے یہاں کلک کریں

کینال روڈ پر پہنچ کر رش کی وجہ سے مالک اور رکشہ ڈرائیور بچھڑ گئے جس کے بعد رکشہ ڈرائیور نے ریلوے سٹیشن پہنچ کر بکروں کے مالک کا کافی دیر انتظار کیا مگر وہ نہ پہنچا جس کے بعد رکشہ ڈرائیور نے ایمانداری کا ثبوت دیتے ہوئے دونوں بکرے نولکھا پولیس کے حوالے کر دیے ۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ بکروں کی گمشدگی کی خبر میڈیا پر چلنے کے بعد بکروں کا مالک یاسر نامی شہری بھی تھانے پہنچ گیا جہاں رکشہ ڈرائیور عمران نے اسے پہچان لیا جس کے بعددونوں بکرے مالک کے حوالے کر دیے گئے ہیں ۔

پولیس ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ بکرے واپس ملنے اور رکشہ ڈرائیور کی ایمانداری پر بکروں کے مالک نے رکشہ ڈرائیور کو انعام کے طور پر 5 ہزار روپے ادا کیے اور ساتھ اسکا شکریہ بھی ادا کیا ۔ یاسر نے ایک لاکھ 10 ہزار روپے میں دو بکرے خریدے تھے۔

مزید :

لاہور -