ویتنام کو 50 کروڑ ڈالر امداد‘ مودی کا دماغی معائنہ کرایا جائے: بھارتی میڈیا

ویتنام کو 50 کروڑ ڈالر امداد‘ مودی کا دماغی معائنہ کرایا جائے: بھارتی میڈیا
ویتنام کو 50 کروڑ ڈالر امداد‘ مودی کا دماغی معائنہ کرایا جائے: بھارتی میڈیا

  

نیویارک (ویب ڈیسک) بھارتی ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا نے نریندر مودی کے جی 20 کانفرنس سے پہلے دورہ ویتنام کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔ گزشتہ روز سوشل میڈیا پر بحث گرم رہی کہ جس ملک کے مظلوم عوام سیلاب کی آفتوں کے نتیجے میں ایک ایک نوالے کے محتاج ہو گئے ہوں اس ملک کا وزیر اعظم اپنی ہٹ دھرمی اور اناءکی خاطر ویتنام کو 50 کروڑ ڈالر کی امداد دے آیا ہے ، ایسے شخص کا دماغی معائنہ وقت کا تقاضا کرتا ہے۔

پاکستان پر پابندیوں کی کوئی تجویز زیر غور نہیں، امریکہ

اس بحث میں بھارتی دفاعی تجزیہ نگاروں کے علاوہ اقتصادی ماہرین اور لاکھوں کی تعداد میں بھارت کے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کا کہنا تھا کہ آخر یہ سب کچھ کر کے نریندر مودی کن کو متاثر کرنا چاہتے ہیں۔ ان کاکہنا تھا ایسے وقت میں جب ویتنام کے ساتھ کئی سمندری اور دفاعی امور پر چین کی رسہ کشی چل رہی ہے ، مودی کا شی جن پنگ سے ملاقات سے پہلے ویتنام جانا اور اس ملک کو 50 کروڑ ڈالر کا اقتصادی پیکیج کے علاوہ دفاع جیسے حساس شعبے میں 12 معاہدوں پر دستخط کرنا اس جانب اشارہ کرتا ہے کہ بھارت چین سے اپنے تعلقات استوار کرنے میں مخلص نہیں بلکہ مودی کا دورہ چین بھی ان کے ان ہتھکنڈوں کی وجہ سے ناکام تصور کیا جارہا ہے۔

اگر مودی کو ویتنام جانا ہی تھا تو یہ پروگرام جی 20 کانفرنس سے واپسی پر بھی انجام دیا جا سکتا تھا۔ دوسری طرف دفاعی ماہرین کا کہنا تھا کہ عالمی تجزیہ نگاروں کی نظر میں نریندر مودی کے اس دورے کو ڈپلومیٹک نااہلی تصور کیا جا رہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -