ایران نے تیل کی قیمت 55 ڈالر فی بیرل کرنے کی تجویز دے دی

ایران نے تیل کی قیمت 55 ڈالر فی بیرل کرنے کی تجویز دے دی
ایران نے تیل کی قیمت 55 ڈالر فی بیرل کرنے کی تجویز دے دی

  

تہران (ویب ڈیسک) ایران کے وزیر تیل بیژن زنگنہ نے کہا ہے کہ ان کا ملک تیل کی عالمی مارکیٹ کو مستحکم کرنے کے لئے کسی بھی فیصلے کی حمایت کرتا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ زیادہ تر اوپیک رکن ممالک تیل کی قیمت 50 اور 60 ڈالر فی بیرل کے درمیان رکھنے کے خواہاں ہیں۔ وہ اوپیک کے سیکرٹری جنرل محدم برکیندو سے ملاقات کے بعد گفتگو کررہے تھے۔

آسٹریلیا کے مرکزی بینک کا قرضوں پر شرح سود 1.5 فیصد برقرار رکھنے کا فیصلہ

ان کا کہنا تھا کہ تیل کی قیمت 55 ہزار فی بیرل مختص کرنے سے اوپیک ممبران کو مطلوبہ معاشی اور تیل سے پیدا ہونے والا ریونیو حاصل ہوگا جبکہ اس طرح ان کے حریف ممالک تیل کی پیداوار کو بھی نہیں بڑھاسکیں گے۔ واضح رہے کہ رواں ماہ کے آخر میں الجزائر میں اوپیک ممالک کا ایک غیر رسمی اجلاس ہوگا جس میں تیل کی پیداوار کو منجمد کرنے اور قیمتون میں اضافے کے لئے مذاکرات کئے جائینگ ے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایران تیل کی قیمتوں میں استحکام کے لئےا وپیک کے ساتھ تعاون کرے گا تاہم ہم امید کرتے ہیں کہ ایران کو ماضی میں اپنا کھویا ہوا شیئر دوبارہ حاصل کرنے کا حق دیا جائے گا۔

مزید :

بزنس -