شام کی فوج پر حلب میں کلورین سے بھرے بم گرانے کا الزام،80افراد زخمی

شام کی فوج پر حلب میں کلورین سے بھرے بم گرانے کا الزام،80افراد زخمی
شام کی فوج پر حلب میں کلورین سے بھرے بم گرانے کا الزام،80افراد زخمی

  

دمشق(آئی این پی)شام میں حکومتی افواج پر حلب کے مضافات میں کلورین سے بھرے بیرل بم گرانے کا الزام عائد کیاگیا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق شام میں موجود امدادی کارکنوں کا کہنا ہے کہ حکومتی افواج نے ہیلی کاپٹروں کے ذریعے ایسے بم گرائے جس سے کم ازکم 80 افراد زخمی ہوئے ہیں۔علاقے میں سرگرم رضاکاروں کا کہنا ہے کہ سکاری کے علاقے میں ایسے بیرل بم گرنے کے بعد لوگ گھٹن کا شکار ہوئے۔

اگر آپ کسی کو بتائے بغیر اس کے فون تک مکمل رسائی چاہتے ہیں تو اس کمپنی سے اتنے روپے میں یہ کام کرواسکتے ہیں؟ ایسا آسان ترین طریقہ سامنے آگیا کہ جان کر آپ اپنے ہی موبائل فون سے ڈر نے لگیں

اس رپورٹ کی ابھی تک آزادانہ ذرائع سے تصدیق نہیں ہو پائی ہے۔اس سے قبل اگست کے مہینے میں اقوام متحدہ کی ایک تفتیش میں پتہ چلا تھا کہ حکومت نے کم از کم دو جگہوں پر کلورین کا استعمال کیا تھا تاہم شام کی حکومت اس بات سے انکار کرتی رہی ہے کہ اس نے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے۔یہ الزامات ایسے موقع پر سامنے آئے ہیں جب شام میں حزبِ مخالف کے رہنما شامی تنازعے کے خاتمے کی کوششوں کے سلسلے میں سیاسی تبدیلی کے نئے منصوبے پر بات چیت کے لیے لندن میں جمع ہو رہے ہیں۔شہری دفاع کے امدادی کارکن ابراہیم الحاج کا کہنا تھا کہ وہ حلب میں ہیلی کاپٹروں سے ہونے والے حملے کے فورا بعد وہاں پہنچے جہاں ایسے بیرل بم گرائے گئے تھے جن میں کلورین کے چار سلینڈر موجود تھے۔سیریئن سول ڈیفینس سے وابستہ ایک رضاکار نے اس سے متعلق فیس بک صفحے پر ایک ویڈیو پوسٹ کی ہے جس میں پریشان بچوں کو سانس لینے کے لیے ماسک پہنے دیکھا جا سکتا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -