ایٹمی طاقت پاکستان کا تعلیمی نظام نئے دور کے تقاضوں سے 60 سال پیچھے ہے: اقوم متحدہ کی رپورٹ میں انکشاف

ایٹمی طاقت پاکستان کا تعلیمی نظام نئے دور کے تقاضوں سے 60 سال پیچھے ہے: اقوم ...
ایٹمی طاقت پاکستان کا تعلیمی نظام نئے دور کے تقاضوں سے 60 سال پیچھے ہے: اقوم متحدہ کی رپورٹ میں انکشاف

  

نیو یارک(نیوز ڈیسک) پاکستان کا تعلیمی معیار کس قدر پست ہے اس کا اندازہ اقوم متحدہ کی ایک رپورٹ سے لگا یاجا سکتا ہے ۔ اقوام متحدہ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایٹمی طاقت پاکستان کا تعلیمی نظام نئے دور کے تقاضوں سے 60 سال پیچھے ہے۔

بی بی سی کے مطابق اقوام متحدہ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان میں نہ صرف شرح خواندگی کی کمی ہے بلکہ پاکستان کا تعلیمی نظام بھی موجودہ دور کے تعلیمی تقاضوں کے معیار سے 60 سال پیچھے ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان کا تعلیمی نظام دنیا بھر میں پرائمری سطح پر دی جانے والی تعلیم کے مقابلے میں 50 سال جب کہ سیکنڈری سطح پر دی جانے والی تعلیم نئے تقاضوں کے معیار سے 60 سال پیچھے ہے تاہم یہ صرف پاکستان کا مسئلہ نہیں بلکہ دیگر کئی ممالک بھی اس فہرست میں شامل ہیں۔

Exide پاکستان کا وہ برانڈ جس کی بیٹریاں دفاعی ادارے بھی استعمال کرتے ہیں کیونکہ ۔ ۔۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں 56 لاکھ ایسے بچے ہیں جو سکول جاتے ہی نہیں جب کہ ایک کروڑ 4 لاکھ ایسے بچے ہیں جو سیکنڈری سکول سے آگے نہیں جاتے۔ جس کی ایک وجہ یہ ہے کہ حکومت اپنے اخراجات کا محض 11.3 فیصد تعلیم پر خرچ کرتی ہے۔ اس وقت حکمرانوں کی ساری توجہ اپنا اقتدار بچانے اور سڑکیں بنانے پر مرکوز ہے لیکن ان کو قوم کے مستقبل کا کوئی خیال نہیں۔

مزید :

قومی -