پنجاب کی 63 کالعدم تنظیموں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر پابندی عائد

پنجاب کی 63 کالعدم تنظیموں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر پابندی عائد
پنجاب کی 63 کالعدم تنظیموں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر پابندی عائد

  

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب حکومت نے قربانی کی کھالیں جمع کرنے کے حوالے سے 63 کالعدم تنظیموں پر پابندی عائد کردی۔ صوبائی حکومت نے اس سلسلے میں کالعدم تنظیموں کی فہرست ضلعی ایڈمنسٹریٹرز کو ارسال کردی ہے تاکہ پابندی کا عملی نفاذ ممکن ہوسکے۔

نجی ٹی وی کے مطابق پنجاب میں 63 کالعدم تنظیمیں عید الاضحی کے موقع پر قربانی کی کھالیں جمع نہیں کرسکیں گی، حکومت پنجاب کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا  گیا ہے کہ کالعدم تنظیمیں کسی بھی صورت عید الاضحی کے موقع پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے کی مجاز نہیں ہیں۔کھالیں جمع کرنے کے حوالے سے خواہش مند تنظیمیں ڈی سی اوز کو درخواستیں دیں گی جس کے بعد ڈسٹرکٹ انٹیلی جنس کمیٹی اپنے اجلاس میں تنظیموں کو بتائے گئے خاص مقامات سے کھالیں جمع کرنے کی اجازت دے گی۔

گارڈین جج نے سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے نواسے کوعدالت کی اجازت کے بغیر بیرون ملک لے جانے سے روک دیا

اس بات کی خاص طور پر ہدایت کی گئی ہے کہ قربانی کی کھالیں جمع کرنے کے لیے لاڈ اسپیکر کے استعمال پر مکمل پابندی عائد ہوگی۔سندھ حکومت نے تنبیہہ کی ہے کہ قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر عائد پابندی کی خلاف ورزی کرنے والوں کو قرار واقعی سزا دی جائے گی۔واضح رہے کہ سندھ اور بلوچستان کی حکومتوں نے بھی کالعدم تنظیموں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے کی پابندی عائد کررکھی ہے۔

مزید :

لاہور -