لوٹا ہوا پیسہ واپس لانے کیلئے ڈنمارک کا بڑا اقدام، ٹیکس چوروں اور باہر سرمایہ رکھنے والے شہریوں کیخلاف تحقیقات کیلئے دس ملین یورو دے کر پاناما پیپرز خرید لئے

لوٹا ہوا پیسہ واپس لانے کیلئے ڈنمارک کا بڑا اقدام، ٹیکس چوروں اور باہر ...
لوٹا ہوا پیسہ واپس لانے کیلئے ڈنمارک کا بڑا اقدام، ٹیکس چوروں اور باہر سرمایہ رکھنے والے شہریوں کیخلاف تحقیقات کیلئے دس ملین یورو دے کر پاناما پیپرز خرید لئے

  

کوپن ہیگن(مانیٹرنگ ڈیسک)اپنے ملک کا لوٹا ہوا پیسہ واپس لانے کیلئے ڈنمارک کی حکومت نے ایک ایسا قابل تحسین قدم اٹھایا ہے جس سے اس ملک میں ٹیکس چوری کرنے اور پیسہ باہر بھجوانے والے افراد قانون کے شکنجے میں آنے والے ہیں۔

برطانوی اخبار ” گارڈین“ کے مطابق ڈنمارک کی حکومت نے دس ملین یورو دے کر پاناما پیپرز خریدے ہیں تاکہ ان پیپرز میں درج 600سے زائد ایسے افراد کے خلاف کارروائی کی جائے جوٹیکس چوری کرتے ہیں اور جن کا اربوں یورو سرمایہ دوسرے ممالک میں پڑا ہے۔اس طرح ڈنمارک پیسے دے کر پاناما پیپرز خریدنے والا پہلا ملک بن گیا۔اخبار کے مطابق ان پیپرز میں ڈنمارک کے ان تمام افراد کے نام موجود ہیں جو ٹیکس چور ہیں یا جن کے اربوں یورو دوسرے ممالک میں ہیں۔ان پیپرز کی مدد سے ان افراد کے گرد گھیرا سخت کیا جائے گا اور ان کو قانون کی گرفت میں لایا جائے گا۔ان افراد سے ان کی آف شور کمپنیوں کے بارے میں تحقیقات بھی کی جائیں گی۔واضح رہے کہ پاناما پیپرز نے جہاں دنیا بھر میں کئی برج الٹا دیئے وہیں پاکستان میں چھ ماہ کے بعد بھی اس مسئلہ پر کوئی پیشرفت نہیں ہو سکی۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -