کینسرکے مریضوں کا 30 منٹ میں آپریشن

کینسرکے مریضوں کا 30 منٹ میں آپریشن
کینسرکے مریضوں کا 30 منٹ میں آپریشن

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)ویسے تو کراچی کے جناح پوسٹ گریجویٹ میڈیکل سینٹر(جے پی ایم سی) کا شمار ملک کے سب سے بڑے ہسپتالوں میں ہوتا ہے، لیکن اب اس ہسپتال کے شعبہ ’ریڈیو لوجی‘ میں ’سائبر نائف‘ نامی ایک نیا شعبہ بھی قائم کیا گیا ہے، جو موذی مرض کینسر کے علاج کے لیے ایک انقلابی قدم ہے۔شعبہ سائبر نائف میں روبوٹ کے ذریعے کینسر کے مریضوں کا صرف اور صرف 30 سے 45 منٹ میں آپریشن کیا جاتا ہے، اس عمل میں نہ تو مریض کو بے ہوش کیا جاتا ہے اور نہ ہی آلات جراحی کی ضرورت پڑتی ہے۔جناح ہسپتال میں نجی فلاحی تنظیم پیشنٹ ایڈ فاؤنڈیشن، سندھ حکومت، پاکستان ایئر فورس (پی اے ایف) اور دیگر مخیر حضرات کی معاونت سے 40 کروڑ روپے مالیت کا سائبر نائف روبوٹ سسٹم نصب کیا گیا ہے، جو ہر قسم کے کینسر کے مریضوں کی سرجری سمیت کینسر کی شناخت کا کام کرتا ہے۔ دنیا بھر میں سائبر نائف روبوٹ سسٹم کے 250 سے بھی کم سسٹم موجود ہیں، جن میں سے ایک جناح ہسپتال میں بھی نصب کیا گیا ہے۔ان جدید طبی روبوٹس کی مالیت کروڑوں روپے میں ہے، جب کہ امریکا جیسے ممالک میں ان کے ذریعے کینسر کے مریضوں کی سرجری 50 سے 90 ہزار ڈالر یعنی پاکستانی 50 لاکھ سے ایک کروڑ روپے کے لگ بھگ میں ہوتی ہے، لیکن پاکستان میں یہ علاج مفت ہو رہا ہے۔جناح ہسپتال کے شعبہ سائبر نائف میں روبوٹک ریڈیو سرجری کرانے میں محض 30 سے 45 منٹ لگتے ہیں اور مریضوں کو 2 سے تین بار آنا پڑتا ہے۔

مزید : صفحہ آخر