خانیوال‘ نوجوان کے علاج میں غفلت‘ دم توڑ گیا‘ ورثاء کا احتجاج

خانیوال‘ نوجوان کے علاج میں غفلت‘ دم توڑ گیا‘ ورثاء کا احتجاج

خانیوال (نمائندہ پاکستان) وزیر اعلی پنجاب اور ضلعی انتظامیہ ڈسڑکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں میں مفت ادویات اور دیگر سہولتیں فراہم کرنے کے دعوے کررہی ہے مگر صورتحال اس سے (بقیہ نمبر28صفحہ12پر )

بالکل مختلف ہے ڈسڑکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال خانیوال میں ادویات کی عدم دستیاب اور ایکسرے فلمیں اور دیگر اشیاء ناپائید ہیں جس کے باعث مریض اور ان کے ورثا رُل گئے ہیں اور ان کی مشکلات اضافہ ہو گیا ہے اور وہ سرکاری ہسپتال میں پرائیوٹ علاج کروانے پر مجبور ہوگئے ہیں دو روز قبل حادثہ میں زخمی ہونے والا محمدعظیم دو روز ڈسڑکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف کی مبینہ غفلت کے باعث گزشتہ شام جاں بحق ہو گیا جس پر مریض کے ورثا نے ڈسڑکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں شدید احتجاج کیا ورثا کا کہنا ہے کہ سفارشوں کے باوجود داکٹرز نے انکے بیٹے کا درست علاج نہ کیا اور ان کی مجرمانہ غفلت کے باعث نوجوان جان کی بازی ہار گیا وزاعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف ،کمشنر ملتان ڈویژناور ڈپٹی کمشنرخانیوال سے ڈسڑکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے معمالات درست کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر