این آئی اے کا کشمیری حریت رہنماؤں کر حراساں کرنے کا سلسلہ جاری

این آئی اے کا کشمیری حریت رہنماؤں کر حراساں کرنے کا سلسلہ جاری
این آئی اے کا کشمیری حریت رہنماؤں کر حراساں کرنے کا سلسلہ جاری

  

سری نگر(آئی این پی )مقبوضہ کشمیر میں بھارتی قومی تحقیقاتی ایجنسی این آئی اے نے حریت رہنماؤں کیلئے دھرتی تنگ کردی ، حریت کانفرنس کے چیئرمین میرواعظ عمرفاروق نے ہفتے کے روز نئی دہلی مارچ کرنے اور عدالت میں گرفتاری دینے کا اعلان کردیا جبکہ یاسین ملک کا کہناہے کہ بھارت تہاڑ جیل کے دروازے کھول کر رکھے۔

بھارتی قومی تحقیقاتی ایجنسی کے اہلکاروں نے گزشتہ روز مقبوضہ کشمیر کے مختلف علاقوں میں چھاپے مارے حریت رہنماں کو حراساں کیا اور گرفتاریاں کیں۔حریت کانفرنس کے چیئرمین میرواعظ عمر فاروق نے جامع مسجد سرینگر میں پریس کانفرنس کے دوران ہفتے کے روز نئی دہلی مارچ کا اعلان کیا اور بھارتی قومی تحقیقاتی ایجنسی کے رویئے کے خلاف عدالت میں گرفتاری پیش کرنے کا اعلان کیا۔

میرواعظ عمر فاروق نے کہا این آئی اے اہلکار جسے چاہیں اٹھاکر لے جاتے ہیں تشدد کرتے ہیں اور من پسند بیان دلانے کی کوشش کرتے ہیں۔لیکن بھارتی ایجنسیوں کی سازش سے کشمیر کی آزادی کی تحریک نہیں رکے گی۔

شام میں کیمیائی ہتھیاروں کی فیکٹری پر اسرائیلی جیٹ طیاروں کا حملہ

کشمیری جیل جانے کو تیار ہیں لیکن حق خود ارادیت کے مطالبے سے دستبردار نہیں ہوں گے۔سید علی گیلانی گھر میں نظربند ہیں جبکہ شبیر شاہ اور یاسین ملک، فہمیدہ صوفی، آسیہ اندرابی اور دیگر متعدد حریت رہنما جیلوں میں قید ہیں۔

سید علی گیلانی نے پریس کانفرنس سے ٹیلیفونک خطاب میں کہا بھارت کچھ بھی کرے آزادی کی تحریک نہیں رکے گی۔ الگ بیان میں شبیر شاہ اور یاسین ملک نے بھارتی ہتھکنڈوں کی مذمت کی اور اعلان کیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر کی آزادی تک جدوجہد جاری رکھیں گے۔

مزید : بین الاقوامی