بدن کو آگ لگا کرہر بیماری ختم کرنے کا انوکھا طریقہ،مہنگی ادویات بنانے والے اس علاج کو دیکھ کر سر پیٹ کر رہ جاتے ہیں

بدن کو آگ لگا کرہر بیماری ختم کرنے کا انوکھا طریقہ،مہنگی ادویات بنانے والے ...
بدن کو آگ لگا کرہر بیماری ختم کرنے کا انوکھا طریقہ،مہنگی ادویات بنانے والے اس علاج کو دیکھ کر سر پیٹ کر رہ جاتے ہیں

  

لاہور (حکیم محمد عثمان)سنا ہے اچھرہ  لاہورمیں ایک صاحب کھولتا ہوا زیتون انسانی بدن پر گرا کر اس سے مریضوں کا علاج کیاکرتے تھے ۔ انہیں اس فن سے علاج کی اجازت کسی بزرگ سے ملی تھی ،گرم اور کھولتے تیل سے علاج کی بات سن کر یقیناً انسان اسکو غیر سائنسی علاج کہے گا لیکن اسکو کیا کہیں گے کہ چین میں آگ سے ایسے امراض کا علاج کیا جاتا ہے کہ عقل دنگ رہ جاتی اور جدیدمیڈیکل سائنس اپنا سرپیٹ کر رہ جاتی ہے۔وہ کام جو مہنگی ترین ادویات نہیں کرپاتیں ،ان کو آگ لگا کر دور کیا جاسکتا ہے ۔چین کا دورہ کرتے ہوئے اس بات کا مشاہدہ کیا ہے کہ چین میں فائر تھیراپی ایک معروف طریقہ علاج بن چکا ہے تاہم اس علاج میں خطرہ بھی ہے کیونکہ اس میں مریض جھلس بھی جاتے ہیں لیکن چینی ماہرین مریض کے بدن کے مخصوص حصوں پر آگ جلا کر اس مرض کا حیرت انگیز طورپرعلاج کردیتے ہیں ۔آگ کی مدد سے وزن گھٹانے،کمر درد،مہروں کے مسئلے ،وائرل انفیکشن،بانجھ پن،کینسر،پیٹ درد،سردرد،سستی ،ڈپریشن سمیت کئی بیماریوں کا علاج کیا جاتا ہے ۔ اس علاج کے لئے معالج مریض کے مخصوص حصہ پر خاص قسم کی جڑی بوٹیوں کی پیسٹ لگاتا،پھر اس پر تولیہ رکھ کر اسکے اوپر ہلکی قسم کی الکوحل چھڑک دیتا ہے،اسکے بعد لائٹر سے آگ سلگاتا ہے تو نیلا اور پیلا شعلہ لپک کر اٹھتا ہے جس کی حدت سے مریض کو تکلیف نہیں ہوتی ۔

دمے اورکھانسی سے تنگ مریضوں کے لئے ایک غیر معمولی جڑی بوٹی سامنے آگئی،یورپ میں اسکا قہوہ اور تیل عام ہورہا ہے

چینیوں کا عقیدہ ہے کہ انسانی جسم گرمی و سردی کے توازن سے صحت مند رہتا ہے۔اس میں توازن ختم ہونے سے مرض پھوٹتے ہیں۔اسلامی طب بھی بدن کی حرارت پرصحت وبیماری کی تشخیص کرتی ہے اور مریض کو اسکے بدن کے مزاج اور حدت کے مطابق غذااور دوا دی جاتی ہے۔چین میں براہ راست آگ سے ہی بدن کے ان حصوں کو آگ سے مخصوص حد تک تپاکر عضلات کو متحرک کیا جاتا ہے جن کی سستی سے مرض پیدا ہوا ہوتا ہے۔

مزید : تعلیم و صحت