فنکاروں کو عمر ڈھلنے کے بعد نظر انداز کر دیا جاتا ہے:قیصر خان

فنکاروں کو عمر ڈھلنے کے بعد نظر انداز کر دیا جاتا ہے:قیصر خان
فنکاروں کو عمر ڈھلنے کے بعد نظر انداز کر دیا جاتا ہے:قیصر خان

  

لاہور(فلم رپورٹر)سینئر اداکار قیصرخان نظامانی نے کہا ہے کہ بد قسمتی سے ہمارے ہاں فنکاروں کو عمر ڈھلنے کے بعد نظر انداز کر دیا جاتا ہے جس کی وجہ سے وہ انتہائی کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوتے ہیں ، حکومت سے درخواست ہے کہ تمام فنکاروں کو سوشل سکیورٹی ایکٹ کے تحت رجسٹرڈ کیا جائے اور میں خود بھی اس کیلئے حکومتی ذمہ داران سے ملاقاتوں کیلئے کوشاں ہوں۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کے مہذب معاشروں میں اپنے شہریوں کو باقاعدہ رجسٹرڈ کیا جاتا ہے اور صرف یہی نہیں کہ انہیں بڑھاپے میں سہارا دیا جاتا ہے بلکہ بیروزگاری ،بچوں کی تعلیم ، شادیوں اور دیگر اخراجات میں بھی ان کی مدد کی جاتی ہے ۔ ہمارے ہاں بھی حکومتیں عوام سے بالواسطہ اور بلا واسطہ ٹیکسز کی وصولی کرتی ہیں اس لئے پاکستانی عوام کو بھی یہ سہولتیں میسر ہونی چاہئیں ۔ قیصر نظامی نے کہا کہ اپنی جوانی میں فن کی خدمت کرنیوالوں کو بڑھاپے میں بے سہارا اور کسمپرسی کی حالت میں دیکھ کر دکھ ہوتا ہے اور اس لئے مطالبہ ہے کہ فنون لطیفہ سے وابستہ لوگوں کو سوشل سکیورٹی ایکٹ کے تحت رجسٹریشن کی جائے ۔

مزید : کلچر