کنزیومر سیکٹر کی لسٹڈ کمپنیوں کے منافع میں 2فیصد کا اضافہ

کنزیومر سیکٹر کی لسٹڈ کمپنیوں کے منافع میں 2فیصد کا اضافہ

اسلام آباد (اے پی پی) رواں سال2018ء کی دوسری سہ ماہی میں اپریل تا جون کے دوران کنزیومر سیکٹر کی لسٹڈ کمپنیوں کے منافع میں 2فیصد کا اضافہ ہوا اور تین ماہ کے دوران پاکستان سٹاک ایکچینج میں لسٹڈ کنزیومر سیکٹر کی کمپنیوں نے14.591 ارب روپے کا منافع کمایا ہے۔ ٹاپ لائن سیکیورٹیزکے تجزیہ کار نبیل خورشید نے اپنی تجزیاتی رپورٹ میں کہا ہے کہ کنزیومر سیکٹرکی کمپنیوں کے منافع میں اضافہ کا بنیادی سبب تمباکو کی صنعت کے منافع میں ہونے والا نمایاں اضافہ ہے۔ رپورٹ کے مطابق اپریل تا جون2018ء کی سہ ماہی کے دوران فلپ مورس اور پاکستان ٹوبیکو کے منافع میں 132فیصد کا نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ رپورٹ کے مطابق اگر تمباکو کی صنعت کے منافع کے بغیرکنزیومر سیکٹر کی کمپنیوں کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے تو سال 2017ء کے مقابلہ میں ان کے منافع میں 11 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے ۔

جبکہ گذشتہ سال کی دوسری سہ ماہی کے دوران ان کے منافع میں 14 فیصد کا اضافہ ہوا تھا۔

مزید : کامرس