چوری کا الزام دکاندار کا 2خواتین پر تشدد ، سٹور میں یرغمال ، وزیر اعلی کا نوٹس

چوری کا الزام دکاندار کا 2خواتین پر تشدد ، سٹور میں یرغمال ، وزیر اعلی کا نوٹس

 لاہور(کر ائم رپورٹر)باٹا پور کے علاقے مین بازار میں کپڑے والی دکان پر کپڑا چوری کے الزام میں دکاندار نے دو عورتوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعدحبس بے جا میں رکھ کے چھوڑ دیا۔ شوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے پر وزیراعلی ٰپنجاب عثمان بزدارنے باٹاپورواقعہ کانوٹس لیاتھا۔ پولیس نے اپنی مدعیت میں مقدمہ درج کر کے ملزمان کی گرفتار ی کے لیے چھاپے مارنے شروع کر دیے، تفصیلات کے مطابق جلوموڑ کے مین بازار میں کپڑے والی دکان پر کپڑے چوری کے الزام میں دکاندار نے ساتھیوں کے ساتھ مل کر دو عورتوں کو تشدد کو ڈنڈوں اور ٹھڈوں سے مارا،تشدد کے بعد دکاندار نے مبینہ طور پر چور عورتوں کو سٹور میں بند کر دیاجہاں انہیں تین سے چار گھنٹے بند رکھا۔ علاوہ ازیں دکاندارنے تشدد بھی کیا اور گالیاں بھی دیں، عورتوں پر الزام لگایا گیا کہ انہوں نے دکان سے شاپنگ کے بہانے کچھ کپڑے چوری کرنے کی کوشش کی جس پر انہیں مارا گیا اس واقعہ کی ویڈیو شوشل میڈیا پر وائرل ہونے پر وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارنے واقعہ کانوٹس لے کر ڈی آئی جی آپریشن لاہور سے رپورٹ طلب کر لی جس پر پولیس کی جانب سے اپنی مدعیت میں عدنان اور اعجاز نامی شخص کے خلاف نامزد مقدمہ درج کر لیا ڈی آئی جی آپریشنز لاہور شہزاداکبر کا کہنا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری کیلئے ریڈنگ ٹیمیں روانہ کردی گئیں ہیں ملزمان کوجلد گرفتارکرکے قانون کی گرفت میں لائینگے کسی شخص کوخواتین پربہیمانہ تشددکی اجازت نہیں دینگے۔

مزید : علاقائی