ملک بھر میں آج یوم دفاع ختم نبوت منایا جائے گا

ملک بھر میں آج یوم دفاع ختم نبوت منایا جائے گا

 اسلام آباد/چناب نگر(صباح نیوز)ملک بھر میں یوم دفاع ختم نیوتؐ آج (بروزجمعہ کو) منایاجائے گا ،ختم نیوت ؐ کے حوالے سے ملک بھرمیں تقریبات ،سیمنار اور ریلیاں نکالی جائیں گی ، 7ستمبر 1974 ؁ء کو قومی اسمبلی نے تاریخ سازآئینی ترمیم پاس کرکے قادیانیوں کو کافر قرار دیا تھا،قومی اسمبلی میں قادیانیوں کوکافر قراردینے کی آئینی ترمیم شام پانچ بج کر باون منٹ پر پاس کی گئی ،انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے زیر اہتمام آج سات ستمبر کو چناب نگر میں 31ویں سالانہ ختم نبوت کانفرنس ہوگی۔تفصیلات کے مطابق 1974میں وزیراعظم ذولفقار علی بھٹو کے دورمیں قومی اسمبلی میں تمام جماعتوں نے قادیانیوں کوغیرمسلم قراردینے کی آئینی ترمیم کی حمایت کی ۔اسمبلی میں قادیانیوں کواپنے دفاع کابھرپورموقع دیامگر وہ اپنے آپ کومسلمان ثابت نہ کرسکے ۔جس پر قومی اسمبلی میں آئینی ترمیم پیش کی گئی جو کوشام پانچ بج کر باون منٹ پر پاس کرلی گئی اور مسئلہ قادیانیت کوہمیشہ کے لیے حل کرلیاگیا۔قرارداد پاس ہونے کے بعد وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو نے پاریخی خطاب کرتے ہوئے کہاکہ قومی اسمبلی کے فیصلے نے قادیانی مسئلہ کوہمیشہ کے لیے طے کردیاہے دوسرے مسائل بھی اسی جذبے سے طے ہونے چاہی ۔انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے زیر اہتمام آج سات ستمبر کو چناب نگر میں 31ویں سالانہ ختم نبوت کانفرنس ہوگی ۔ 7ستمبر 1974 ؁ء کو قومی اسمبلی نے تاریخ ساز فیصلہ سناتے ہوئے قادیانیوں کو کافر قرار دیا تھا۔ 31ویں سالانہ ختم نبوت کانفرنس میں پاکستان سمیت دیگر مسلم ممالک سے بھی دینی ومذہبی شخصیات شرکت کریں گی۔ اتوارکواپنے بیان میں مرکزی علماء کونسل کے سیکرٹری اطلاعات اور انٹر نیشنل ختم نبوت موومنٹ پنجاب کے رہنما حافظ محمد طیب قاسمی نے کہا ہے کہ جب تک قادیانیوں کو آئین پاکستان پابند نہیں بنایا جائے گا ملکی سلامتی کو خطرات لاحق رہیں گے۔ قادیانی پاکستان کو کمزور اور غیر مستحکم کرنے کیلئے ملک دشمن قوتوں کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں۔ 7ستمبر 1974 ؁ء کو قومی اسمبلی نے تاریخ ساز فیصلہ سناتے ہوئے قادیانیوں کو کافر قرار دیا تھا مگر آج تک قادیانیوں نے آئین پاکستان اور پارلیمنٹ کے اس فیصلے کو تسلیم نہیں کیا۔انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے زیر اہتمام سات ستمبر کو چناب نگر میں 31ویں سالانہ ختم نبوت کانفرنس ہوگی ۔جس میں پاکستان سمیت دیگر مسلم ممالک سے بھی دینی ومذہبی شخصیات شرکت کریں گی۔ کانفرنس کی تیاریوں کے سلسلہ میں علماء ،طلباء سے ملاقات کرتے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ قادیانیوں کو اسلام کا ٹائٹل استعمال کرنے سے روکا جائے۔اعلیٰ سرکاری عہدوں پر تعینات سکہ بند قادیانی ملکی سلامتی و استحکام کیلئے خطرہ ہیں لہٰذا تمام سرکاری و نیم سرکاری محکموں کے اعلیٰ عہدوں پر فائز قادیانیوں کو فی الفور ہٹایا جائے۔ دوسرے غیر مسلموں کے اوقافوں کی طرح قادیانی اوقاف کو بھی حکومتی تحویل میں لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی دستوری اور قانونی رٹ بحال کرنے کے ٹھوس اقدامات کئے جائیں اور قادیانیوں کی چناب نگر میں قائم متوازی عدالتیں ختم کرکے ملک کے قانونی نظام کی بالادستی کو یقینی بنایا جائے۔قادیانی چینلز کی نشریات کا نوٹس لیا جائے اور ملک کے آئین اور قانون کے تقاضوں کے منافی نشریات پر پابندی عائد کی جائے۔

مزید : صفحہ آخر