خیبر پختو نخوا میں بھی ضمنی انتخابات کی تیاریاں زور و شور سے جاری

خیبر پختو نخوا میں بھی ضمنی انتخابات کی تیاریاں زور و شور سے جاری

پشاور(سٹی رپورٹر)ملک بھر کی طرح خیبر پختونخوامیں بھی ضمنی الیکشن کیلئے تیاریاں زوروشور سے جاری ہے اس سلسلے میں وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک کا آبائی علاقہ نوشہرہ بھی ضمنی انتخابات کے دوران سیاسی سرگرمیوں کا مرکز بن گیا ،جبکہ وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک نے ضمنی انتخابات میں پی کے 64نوشہرہ سے ضلع ناظم سے مستعفی ہونیوالے انکے بھائی لیاقت خٹک اور پی کے 61نوشہرہ سے صاحبزادے ابراہیم خٹک کی طرف سے کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق مختلف سیاسی شخصیات نے ضمنی الیکشن میں بھی اپنے اثر ورثوخ کے باعث خاندان کے افرادکیلئے کاغذات ٹکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے۔ خیبر پختونخواکے دیگر اضلاع کی طرح صوبائی اسمبلی کی دو نشستوں پی کے 61نوشہرہ اورپی کے 64نوشہرہ کیلئے الیکشن ہونے والے ضمنی الیکشن کیلئے تحریک انصاف اور اپوزیشن سیاسی جماعتوں کی طرف سے رابطہ عوام مہم کا سلسلہ تیز کر دیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر داخلہ پرویز خٹک کے خالی ہونیوالے صوبائی حلقے سے انتخاب لڑنے کیلئے ان کے بھائی لیاقت خٹک ضلع ناظم کے عہدے سے مستعفی ہو کر پی کے 64نوشہرہ سے الیکشن لڑنے کے لئے کاغذات نامزدگی جمع کروائے گئے ہیں جبکہ صوبائی اسمبلی کے 61نوشہرہ سے الیکشن لڑنے کے لئے پرویز خٹک کے صاحبزادے ابراہیم خٹک کی طرف سے کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے گئے ہیں،اسی طرح اپوزیشن میں شامل سیاسی جماعتوں قومی وطن پارٹی، مسلم لیگ، جماعت اسلامی، جمعیت علما اسلام اور پیپلز پارٹی کی طرف سے پی ٹی آئی کے مقابلہ میں اے این پی کے امیدوار شاہد خٹک کی حمایت کا فیصلہ کر لیا گیا ہے جبکہ پی کے 61نوشہرہ کی صوبائی اسمبلی کی نشست کے لئے سابق وزیراعلی ٰ اور وفاقی وزیر داخلہ پرویز خٹک کے مقابلہ میں الیکشن لڑنے والے خان پرویز خٹک نے پی کے 61اور پی کے 65کی دونوں نشستوں سے الیکشن لڑنے کا رابطہ عوام مہم کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ صوبائی اسمبلی پی کے 64سے الیکشن لڑنے کے لئے پی ٹی آئی کے رہنما خالد اللہ خان کی طرف سے بھی کاغذات نامزدگی جمع کروا دیئے گئے ہیں جبکہ ٹکٹ کے لئے درخواست بھی دیدی گئی ہے اس سلسلے میں خالد اللہ خان نے رابطہ کرنے پر بتایا کہ وہ پی ٹی آئی کے بانی کارکن ہیں اور پی ٹی آئی کی فنڈ ریزنگ کے سلسلے میں بیرون ملک مہم بھی چلا چکے ہیں ،پی ٹی آئی میں موروثی سیاست اور خاندانی اجارہ داری کے لئے مخلص کارکنوں کی حوصلہ افزائی کی ضرورت ہے۔ وزیر دفاع پرویز خٹک کی اہلیہ اور ان کے بھانجے رکن قومی اسمبلی اور ان کے بھتیجے تحصیل ناظم ہیں جبکہ ان کے خاندان کی دو خواتین مخصوص نشستوں پر رکن اسمبلی منتخب ہو چکی ہیں ،پرویز خٹک کے بھائی اور صاحبزادے کو ٹکٹ دینے سے موروثی سیاست اور خاندانی جارہ داری کو فروغ ملے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر