نیب ٹیم کا ظاہر پیر میں آپریشن ، افسروں سمیت6افراد گرفتار

نیب ٹیم کا ظاہر پیر میں آپریشن ، افسروں سمیت6افراد گرفتار

ظاہر پیر(نمائندہ پاکستان) نیب ملتان کیچھاپہ مار ٹیم نے بے نظیر برج کی اپروچ روڈ کے لئے اراضی کی خریداری پر مبینہ طور پر 20 کروڑ روپے کے گھپلوں میں ملوث نیشنل ہائی وے اور محکمہ مال کے 4 ملازمین سمیت 6 افراد کو گرفتار کر لیا, ظاہر پیر میں چھاپے کے دوران مقامی پولیس سے بھی مدد لی گئی, کروڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے ,مارے جا رہے ہیں۔تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے سابقہ دور حکومت(بقیہ نمبر51صفحہ12پر )

میں دو اضلاع رحیم یار خان اور راجن پور کو ملانے کے لئے دریائے سندھ پر چاچڑاں شریف کے مقام پر بے نظیر شہید برج کے نام سے منصوبہ شروع کیا گیا جس کے تحت ظاہر پیر سے چاچڑاں شریف تک ایک اپروچ روڈ بھی تعمیر ہونا تھی اپروچ روڈ کی تعمیر کے لئے نیشنل ہائی وے اور محکمہ ریونیو نے ظاہر پیر کے موضع تتار چاچڑ میں مقامی زمینداروں سے مجموعی طور پر 29 کنال 5 مرلہ اراضی 21کروڑ 46لاکھ 62 ہزور روپے میں خریدی گئی جبکہ محکمہ ریونیو زرائع کے مطابق یہ تمام اراضی کی قیمت بمشکل 1 کروڑ 48 لاکھ روپے بنتی تھی مگر نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے لینڈ ایکوزیشن کلکٹر وسیم احمد نے نیشنل ہائی وے کے تحصیلدار نوید مراد ڈاہر, پٹواری شفیق شاہ محکمہ ریونیو کے پٹواری غلام حسین, گرداور محمد اسلام اور مقامی زمینداروں محمد طیب, محمد طاہر, عبدالغنی, نوید الحسن, عبدالمجید , کرم الہی شاہ , محمد اصغر, محمد امین سمیت دیگرز سے مل کر یہ اراضی اصل قیمت سے کئی گناہ زیادہ نرخوں پر خرید کرکے حکومت سے ملنے والی خطیر رقم آپس میں بندر بانٹ کر لی تھی, کروڑوں روپے کی کرپشن کی نشاندہی ہونے پر نیب ملتان نے ایک سال قبل انکوائری شروع کر دی تھی اور نظیر برج کے لیے اپروچ روڈ کے لئے 29 کنال 5 مرلے اراضی کی مہنگے داموں خریداری ثابت ہونے کے بعد نیب کی چھاپہ مار ٹیم نے گزشتہ روز ظاہر پیر میں چھاپے مار کر لینڈ ایکوزیشن کلکٹر محکمہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی محمد وسیم ، پٹواری محمد شفیق ، محکمہ مال کے پٹواری غلام حسین ، گردوار محمد اسلام کے علاوہ عبدالحمید اور نوید نامی شخص کو بھی گرفتار کر لیا ہے زرائع کے مطابق مذکورہ ملزمان پر سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے کا الزام ثابت ہونے پر گرفتار کیا گیا ہے زرائع نے انکشاف کیا ہے کہ اس منظم گھپلے میں سابق ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن آفیسر رحیم یار خان کیپٹن (ر) ظفر اقبال کی معاونت کے شواہد بھی ملے تھے اور ان کے خلاف بھی انکوائری جاری ہے تاہم نیب کی چھاپہ مار ٹیم نے اس کی تحقیقات مکمل کرنے کے بعد تمام موجود ثبوتوں کی روشنی میں یہ گرفتاریاں کیں اور گرفتار ملزمان کو نیب ملتان میں منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ مزید ملزمان کی گرفتاریوں کے لئے چھاپے مارنے کا سلسلہ جاری ہے ۔

بے نظیر برج

مزید : ملتان صفحہ آخر