وہاڑی: شر پسند عناصر کا ہسپتال پر دھاوا ڈاکٹرز سے ہاتھا پائی ، عملے کی ہڑتال

وہاڑی: شر پسند عناصر کا ہسپتال پر دھاوا ڈاکٹرز سے ہاتھا پائی ، عملے کی ہڑتال

وہاڑی(بیورورپورٹ+نا مہ نگار) شر پسند عناصرنے ڈی ایچ کیوہسپتال کے ڈاکٹرزاورپی ایم اے کے صدر ڈاکٹرغلام حسین آصف کوتشددکانشانہ بنایاجس کے نتیجہ میں ہسپتال کے عملہ نے ہڑتال کردی۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق گڑھاموڑمیں دن دھاڑے ڈکیتی کی واردات کے دوران مزاحمت پرڈاکوؤں کی فائرنگ سے آئرن سٹور کا مالک ریاض گل خان زخمی ہوگیا جبکہ اس کابیٹاسہیل خان موقع پرجاں بحق ہوگیاتھاسہیل خان کی ڈیڈباڈی پوسٹمارٹم کیلئے اورزخمی (بقیہ نمبر31صفحہ7پر )

ریاض گل خان کوعلاج کیلئے ڈی ایچ کیوہسپتال لایاگیاتواس دوران بعض شرپسند عناصرنے بلاوجہ ڈی ایچ کیو ہسپتال میں غنڈہ گردی کرتے ہوئے ڈاکٹرزکوتشدد کانشانہ بنادیا پی ایم اے کے ضلعی صدرڈاکٹر غلام حسین آصف کاکہناہے کہ جب ریاض گل خان کوہسپتال لایاگیاتوڈاکٹرزنے پوری توجہ کے ساتھ اس کاعلاج شروع کیاحالانکہ اس کی حالت خطرہ سے باہرتھی لیکن چالیس پچاس کے قریب بعض ایسے شرپسندعناصرجوکہ لواحقین کے ساتھ آئے ہوئے تھے انہوں نے بلاوجہ ڈاکٹرزکے ساتھ الجھناشروع کردیاجب میں نے انہیں سمجھانے کی کوشش کی توان عناصرنے مبینہ طورپر مجھ سمیت دیگر ڈاکٹرزکوتشددکانشانہ بناناشروع کردیاجبکہ متاثرین کے لواحقین علاج معالجہ سے مکمل مطمئن تھے ان غنڈہ گردعناصر نے ڈاکٹرزپرتشددکرکے ہسپتال کاماحول خراب کیاہے جس کے نتیجہ میں تمام ڈاکٹرزنے ڈی ایچ کیوہسپتال سمیت ضلع بھرکے ہسپتالوں میں ہڑتال کرکے کام بندکرادیاہے ڈاکٹر غلام حسین کایہ بھی کہناہے کہ حکومت فوری طورپرنوٹس لے کرملزمان کوگرفتارکرکے ان کے خلاف دہشت گردی کے مقدمات قائم کرے ورنہ پنجاب بھرکے سرکاری ہسپتالوں میں ہڑتال کرادی جائے گی دوسری طرف پولیس تھانہ دانیوال موقع پرپہنچ گئی پولیس کودیکھتے ہی مبینہ غنڈہ گردعناصرہسپتال سے رفوچکرہوگئے پولیس نے تفتیش شروع کردی ہے جبکہ ڈاکوؤں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے سہیل خان کاپوسٹمارٹم کرکے لاش ورثاکے حوالہ کردی گئی ہے پولیس چوکی گڑھاموڑنے نامعلوم ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیاہے۔

تشدد

مزید : ملتان صفحہ آخر