بھارت نے دریائے چناب کا ایک لاکھ کیوسک پانی روک لیا

بھارت نے دریائے چناب کا ایک لاکھ کیوسک پانی روک لیا
بھارت نے دریائے چناب کا ایک لاکھ کیوسک پانی روک لیا

  

سیالکوٹ (آئی این پی ) بھارت نے پاکستان کو بنجر بنانے کی سازش پر عمل کرتے ہوئے دریائے چناب کا ایک لاکھ  کیوسک پانی روک لیا۔ ہیڈ مرالہ کے 66 میں سے 62 سپل وے بند کر دیئے گئے۔ ہیڈ خانکی کو پانی کا اخراج روکے جانے کا امکان ، نہر اپر چناب اور نہر مرالہ راوی لنک کا پانی کی فراہمی میں کمی کر دی گئی۔ وسطحی اور جنوبی پنچاب میں دھان اور کپاس کی فصل کو شدید نقصان کا خدشہ ۔

روزنامہ خبریں کے مطابق ہندوستان نے اپنی طرف سے آبی جارحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے مقبوضہ جموں و کشمیر ، لداح و دیگر مقامات پر بگہیار ڈیم ۔سلاسل اور دیگر تین ڈیموں پر سندھ طعاس معاہدہ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایک لاکھ سے زائد کیوسک پانی روک لیا ہے جس سے دریائے چناب مین پانی کی سطح ایک لاکھ 40 ہزار کیوس کی بجائے 36 ہزار 586 کیوسک تک نیچے گر گئی ہے اور ہیڈ مرالہ اتھارٹی نے ہیڈ خانکی کو پانی کا اخراج انتہائی کم کر کے 9 ہزار 770 کیوسک کر دیا ہے۔ جبکہ مرالہ کے 66 میں سے 62 سپل ویز کو بند کر دیا گیا ہے اتھارٹی کا کہنا تھا ہے کہ اگر پانی کی آمد میں مزید کمی واقع ہوئی تو ہیڈ مرالہ سے پانی کا اخراج مکمل طور پر بند کردیا جائیگا اور صرف نہر مرالہ راوی لنک اور نہر اپر چناب کا پانی فراہم کیا جائیگا۔

ہیڈ مرالہ اتھارٹی کے مطابق دریائے دریائے چناب ، دریائے جموں توی اور دریائے مناور توی میں پانی کی آمد 41 ہزار 645 کیوسک ہے اور اس میں سے نہراپر چناب کو 18 ہزار کی بجائے 13875 کیوسک پانی فراہم کیا جا رہا ہے ار نہر مرالہ راوی لنک کو 22 ہزار کی بجائے 18 ہزار کیوسک پانی کی فراہمی جاری ہے۔ دریائے چناب میں پانی کی آمد 36ہزار 581، دریائے جموں توی میں 3460 ، دریائے مناورتوی میں 1652 کیوسک ریکارڈ کیا جا رہا ہے پانی کی شدید قلت کے باعث ہیڈ خانکی ، ہیڈ قادر آباد ، ہیڈ تریما ، ہیڈ رسول اور ہیڈ پنجند سے برآمد ہونے والی نہریں شدید متاثر ہونگیں اور ان کو پانی فراہم مجبوراً روکنا پڑی گئی اور جس سے وسطحی پنجاب میں دھان کی فصل اور جنوبی پنجاب میں کپاس کی فصل کے کاشتکاروں کو شدید مالی شدید مالی نقصان ہوگا اور وہ مجبوراً زیر زمین مہنگا پانی حاصل کرکے اپنی اراضی کو سیراب کرنے پر مجبور ہونگے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /سیالکوٹ /ماحولیات