’’خبردار! دبئی جاتے وقت دوران پرواز یہ چیز کبھی بھی استعمال نہ کریں، گرفتار کیا جا سکتا ہے‘‘ مسافروں کے لیے وارننگ جاری کر دی گئی

07 ستمبر 2018 (19:09)

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) لندن سے دبئی جانے والی ایک برطانوی خاتون نے ہوائی جہاز میں ایسا کام کر ڈالا کہ اسے دبئی پہنچتے ہی گرفتار کرکے 4سالہ بیٹی سمیت جیل میں ڈال دیا گیا۔ یہ کیا کام تھا؟ سن کر آپ کی حیرت کی انتہاء نہ رہے گی۔ میل آن لائن کے مطابق ڈاکٹر ایلی ہولمین نامی یہ خاتون ایمریٹس ایئرلائنز کی پرواز کے ذریعے چھٹیاں منانے کے لیے بیٹی کے ہمراہ متحدہ عرب امارات جا رہی تھی۔ اس نے دوران پرواز ایک گلاس شراب پی لی، جس پر اسے دبئی ایئرپورٹ پر اترتے ہی پولیس نے حراست میں لے لیا۔

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر ایلی کو 3دن تک جیل میں رکھا گیا اور اسے ہاؤس اریسٹ کر دیا گیا۔ اس کی نظربندی کو ایک ماہ گزرنے پر متحدہ عرب امارات کے حکمران نے مداخلت کی اور ڈاکٹر ایلی کی رہائی کا فرمان جاری کر دیا، جس پر اسے رہائی ملی اور وہ واپس لندن چلی گئی۔اس واقعے کے بعد اب متحدہ عرب امارات میں واقع برطانوی سفارتخانے کی طرف سے اپنے فیس بک پیج پر ایک پوسٹ کی گئی ہے جس میں برطانوی شہریوں کو متنبہ کیا گیا ہے کہ وہ امارات آتے ہوئے دوران پرواز بھی شراب مت پئیں، ورنہ انہیں گرفتار کر لیا جائے گا۔

اپنے ساتھ پیش آنے والے اس واقعے پر ڈاکٹر ایلی کا کہنا تھا کہ ’’میں ایئرپورٹ پر اتری تو مجھ سے پوچھا گیا کہ کیا تم نے جہاز میں شراب پی تھی، جس پر میں نے اعتراف کر لیا کیونکہ میرے خیال میں میں نے اماراتی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی تھی۔ تاہم اس کے باوجود مجھے گرفتار کر لیا گیا۔ میں خوش ہوں کہ برطانوی سفارتخانے کی طرف سے لوگوں کو اس حوالے سے وارننگ جاری کی گئی ہے۔ اگر مجھے معلوم ہوتا کہ خون میں شراب کے ثبوت ہونا بھی امارات میں جرم تصور کیا جاتا ہے تو میں کبھی جہاز میں شراب نہ پیتی۔‘‘

مزیدخبریں