کون کتنا منہ پھٹ ہوسکتا ؟ ہاتھ کی انگلیوں کی وہ نشانیاں جو آپ کو دوسروں کی شخصیت سے آگاہ کرسکتی ہیں

07 ستمبر 2018 (19:23)

لاہور(نظام الدولہ)عام طوریہ مشاہدہ کرنے پر نظر آتا ہے کہ بہت سے لوگ کافی منہ پھٹ ہوتے ہیں ۔ان سے کوئی بات کی جائے تو وہ اپنا نقطہ نظر بیان کرنے میں کوئی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کرتے بلکہ اپنی حیثیت و شخصیت کے مطابق مقابل پر اپنی بات واضح کردیتے ہیں جس کی وجہ سے بسا اوقات دوسروں کو محسوس ہوتا ہے کہ وہ ان کی بے عزتی کررہے ہیں جبکہ وہ شخص اپنی جبلت کی وجہ سے کسی دباو کو خاطر میں لائے بغیراپنی بات لازمی کرتے ہیں ۔اگر وہ ماتحت ہوں تو انہیں بدتمیزیا بد لحاظ کہہ دیا جاتا ہے۔بہت سے وہ لوگ جو خود کو بڑا صاف گو اور ،منہ پر بات کرنے کا عادی سمجھتے ہیں وہ بھی اپنی اسی جبلت کے تحت ایسی جراتمندی سے مغلوب ہوتے ہیں ۔بات کرنے کے بعد ان کے دل میں کوئی انتقامی جذبہ بھی نہیں رہتا ۔

اللہ نے ہر انسان کے مزاج کو الگ فطرت پر پیدا کیا ہے ۔یہ اللہ کی بنائی ہوئی ایسی کاریگری ہے کہ جس کا مشاہدہ اور احاطہ کرنا مشکل ہے ۔انسان کے دماغ میں جیسے نیٹ ورک ہوں گے ،وہ اسکی فطرت کی تکمیل کریں گے ۔ان کا عکس ہاتھ کی لکیروں اور بناوٹ سے ظاہر ہوجاتا ہے ۔جیسا کہ اب ہم منہ پھٹ انسان کے بارے میں بات کررہے ہیں ۔یہ جملہ غیر معمولی طور بات کہنے والوں کے متعلق بولا جاتا ہے کہ وہ منہ پر ہی بات کہنے یا کسی بحث کے دوران خاموشی میں مصلحت نہیں سمجھتے او ربات کر ڈالتے ہیں ۔کئی بار ایسے لوگوں کی انہیں عادات کی وجہ سے معمولی بات بھی جھگڑوں میں بدل جاتی ہے ۔

منہ پھٹ عام طور وہ لوگ ہوتے ہیں جن کے ہاتھ کی انگلیوں کے درمیان فاصلہ ہوتا ہے ۔یعنی جب وہ ہتھیلی سیدھی کرکے انگلیاں آپس میں جوڑیں تو ان کی انگلیوں میں فاصلہ یا خلا نظر آجائے تو ایسے لوگ منہ پھٹ ہوتے ہیں۔اس کا انحصار فاصلہ یا خلا پر ہوتا ہے ۔بہت سے لوگوں کی انگلیاں جیسے جڑی ہوتی ہیں اور ذرا سا بھی خلا درمیان میں نہیں ہوتا ،اسی طرح بہت سے لوگوں کی انگلیاں جوڑنے پر ان میں خلا نظر آجاتا ہے ،جیسا کہ یہاں دی گئی فوٹو سے اندازہ ہوجاتا ہے ۔

دراصل جن کی انگلیوں میں فاصلہ زیادہ ہو یا بند کرنے پر بھی ان میں فاصلہ نظر آئے تو ایسے لوگ آزاد منش ہوتے ہیں ۔ان پر دباو سے قابو پانا مشکل ہوتا ہے ۔ان سے تعلقات اسی صورت نبھ سکتے ہیں جب آپ ان کو سمجھ لیں کہ یہ دل کے اچھے ہوتے ہیں۔منہ پھٹ ہونے کی اور بھی ہاتھوں میں نشانیاں موجود ہوتی ہیں تاہم اسکے ساتھ ایسے افراد کی فطرت میں تنگی اور آزادی بھی پائی جاتی ہے ۔ان میں ایسے منہ پھٹ بھی ہوتے ہیں جو بعد میں انتقام بھی لیتے ہیں لیکن ان کی انگلیوں میں فاصلہ زیادہ نہیں ہوتا ۔(nizamdaola@gmail.com )

مزیدخبریں