ملک میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریاں جاری، مزید 14افراد جاں بحق، 8زخمی

ملک میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریاں جاری، مزید 14افراد جاں بحق، 8زخمی

  

  اسلام آباد(این این آئی)ملک بھر میں جاری حالیہ بارشوں و سیلابی تباہ کاریوں کے نتیجے میں مزید 14 افراد جاں بحق اور8 زخمی ہوگئے۔این ڈی ایم اے کی رپورٹ کے مطابق ملک بھر میں جاری حالیہ بارشوں و سیلابی تباہ کاریوں کے نتیجے میں مزید 14 افراد جاں بحق اور 8 زخمی ہوگئے۔ جس کے بعد اب تک مجموعی طور پر 233 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ جاں بحق ہونے والوں میں 89 کم عمر بچوں سمیت 39 خواتین و 105 مرد شامل ہیں۔رپورٹ کے مطابق بارش و سیلابی تباہ کاریوں کے نتیجے میں سب سے زیادہ خیبرپختونخوا میں 195 افرادجاں بحق ہوئے۔ پنجاب میں 16، سندھ میں 84، بلوچستان میں 19، کشمیر میں 10 جبکہ گلگت بلتستان میں 11 افراد جاں بحق ہوئے۔حالیہ مون سون سیزن کے دوران اب تک مجموعی طور پر 233 افراد جاں بحق جبکہ 166 زخمی ہوئے اس دوران بارشوں و سیلاب سے 10 رابطہ سڑکیں، 10پل، 2 ہوٹل، 3 دکانیں، 5 مساجد، 6 پاور ہاوسز کو بھی نقصان پہنچا۔۔ کشمور میں کچے کے 10 سے زائد گاؤں زیر آب آگئے جن کا زمینی رابطہ بھی منقطع ہو گیا جبکہ دریائے چناب میں طغیانی کے باعث زمیندارہ بند نور سوئی ٹوٹ گیا جس کی وجہ سے وسیع رقبے پر کھڑی فصلیں زیر آب آ گئیں۔ دریائے چناب میں سیلاب سے اوچ شریف، فرید آباد، سرور آباد میں وسیع پیمانے پر کھڑی فصلیں زیر آب آ گئیں اور شہری اپنی مدد آپ کے تحت گھر بار چھوڑ کر محفوظ مقامات پر منتقل ہو گئے۔ دریائے جہلم میں نور پور تھل جوڑا کلاں کے مقام پر پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور سینکڑوں ایکڑ رقبے پر کھڑی فصلیں زیر آب آگئیں۔ اسکردو کے نواحی علاقے سندوس میں بھی دریائی کٹاو کے باعث ہزاروں کنال قابل کاشت اراضی دریا برد ہو گئیں۔سندھ میں شدید بارشوں کے باعث بدین کی تحصیل گولارچی سے گزرنے والے سیم نالوں اور نہروں کے پشتوں میں پانچ شگافوں نے تباہی مچا دی۔سانگھڑ کی تحصیل سندھڑی کے کئی دیہات میں کچے مکانوں کی دیواریں گر گئیں جبکہ ٹنڈو محمد خان میں متاثرہ افراد گھر بار چھوڑ کر سڑک پر آگئے۔

بارش

مزید :

صفحہ آخر -