لیبر ایکٹ کی خلاف ورزی پر چھاپے، 2519چالان

لیبر ایکٹ کی خلاف ورزی پر چھاپے، 2519چالان

  

 لاہور (خبر نگار) محکمہ لیبر کی ٹیموں نے لاہور سمیت شیخوپورہ اور ننکانہ میں کم سے کم اُجرت،ویجز کی عدم ادائیگی سمیت دیگر لیبر لاز کی خلاف ورزی پر چھاپوں کے دوران 2519فیکٹریوں، کارخانوں، ورکشاپوں اور ہوٹلوں کے چالان کر دئیے ہیں۔ ڈاریکٹر لیبر ساؤتھ ریجن لاہور ضیغم عباس مظہر نے مزدور کو کم از کم اجرت۔ ویجز کی عدم ادائیگی۔ کم عمر بچوں سے مزدوری اور دیگر لیبر لاز کی خلاف ورزی کے حوالے سے جاری تین روزہ مہم کے دوران 1034 فیکٹریوں کارخانوں، ورکشاپوں،ہوٹلوں،ریسٹورنٹس پرائیوٹ دفاتر اور بینکوں کے چالان کیے ہیں جبکہ ڈائریکٹر لیبر نارتھ ریجن ارشد محمود تارڑنے 1485فیکٹریوں اور کارخانوں کے چالان کیے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر محنت انصر مجید نیازی کی ہدایت پر سیکرٹری لیبر محمد عامر جان اور ڈی جی لیبر پنجاب فیصل نثار چوھدری کی نگرانی میں لیبر ایکٹ کی خلاف ورزی کے خلاف تین روزہ جاری مہم میں ڈائریکٹر لیبر لاہور ساؤتھ ریجن صیغم عباس مظہر نے اپنی ٹیم کے ہمراہ مختلف فیکٹریوں،کارخانوں،ورکشاپوں، ہوٹلوں، ریسٹورنٹس اور انٹرنیشنل اور ملٹی نیشنل برانڈز، فوڈ چینز، کارپوریشنز کے دفاتر، غیر ملکی برانڈز، سٹورز، بینکوں وغیرہ 5548 اداروں کی  انسپکشن کی جس میں 1034مقامات پر لیبر لاز کی خلاف ورزی پائی گئی ہے جس پرچالان متعلقہ عدالتوں میں بھجوائے دیئے گئے ہیں۔اسی طرح ڈائیریکٹر لیبر نارتھ ریجن ارشد محمود تارڑکی نگرانی میں پانچ ٹیموں نے شاہدرہ،فیروزوالا،شیخوپورہ اور ننکانہ میں چھاپوں کے دوران ننکانہ میں 4590فیکٹریوں اور کارخانوں سمیت ہوٹلوں اور بھٹہ جات کی انسپیکشن کی جس میں 1485فیکٹریوں اور کارخانوں میں لیبر ایکٹ کی خلاف ورزی پائی گئی جن کے چالان کئے گئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -