ملک میں تعلیمی ادارے 15ستمبر سے کھولنے یا بند رہنے کا اہم فیصلہ آج ہو گا

  ملک میں تعلیمی ادارے 15ستمبر سے کھولنے یا بند رہنے کا اہم فیصلہ آج ہو گا

  

 اسلام آباد(آئی این پی) تعلیمی ادارے 15ستمبر کو کھلیں گے یا نہیں؟فیصلہ آج وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت ہونیوالے صوبائی وزرائے تعلیم کے اجلاس میں کیا جائے گا۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت اجلاس میں تمام صوبائی وزرائے تعلیم شریک ہوں گے، اجلاس میں تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا،اجلاس میں وزارت صحت کے حکام سے تفصیلی بریفنگ کے بعد اداروں میں سرگرمیاں بحال کرنے سے متعلق سفارشارت قومی رابطہ کمیٹی کو بھجوائی جائیں گی،چیئرمین اور ایگزیکٹو ڈائریکٹر ایچ ای سی بھی اجلاس میں شریک ہوں گے،اجلاس کا 6نکاتی ایجنڈا جاری کردیا گیا ہے جس میں تعلیمی اداروں سے متعلق ایس او پیز کو حتمی شکل دی جائے گی،مختصر اکیڈمک سلیبس اور 2021میں امتحانات پر بھی گفتگو ہوگی۔وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ حکومت 15 ستمبر سے تعلیمی سرگرمیوں کا آغاز مرحلہ وار کرنے کا ارادہ رکھتی ہے، تعلیمی سرگرمیوں کے آغاز کا فیصلہ پیر کو متوقع ہے۔ایک انٹرویومیں شفقت محمود نے کہا کہ پیر کو تمام صوبوں کے وزرا ء تعلیم کی میٹنگ ہوگی۔وزیرتعلیم نے کہا کہ ہفتے بعد پرائمری کلاسیں بھی کھولنے کا ارادہ ہے، ایس او پیز کے مطابق طالب علموں کا ماسک پہننا لازم ہوگا۔شفقت محمود نے کہا کہ ایک دن کلاس کے آدھے طالبعلم آئیں اور اگلے دن دوسرے، سماجی فاصلہ رکھنے سے بچوں میں جراثیم کی منتقلی نہیں ہوسکے گی۔

سکول کھولنے کا فیصلہ

مزید :

صفحہ اول -