میر حاصل بزنجو کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے پشاور پریس کلب میں تعزیتی ریفرنس 

  میر حاصل بزنجو کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے پشاور پریس کلب میں تعزیتی ...

  

پشاور (سٹی رپورٹر) پختونخوا جمہوری اتحاد کے زیر اہتمام میر حاصل بزنجو کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے پشاور پریس کلب میں تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کیا گیا جسمیں مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماوں نے شرکت کی جنمیں پیپلز پارٹی کے  سنٹیر فرحت اللہ بابر، قومی وطن پارٹی کے رہنما سکندر شیر پاو، جمیعت العلماء کے صوبائی امیر مولانہ عطاء الرحمن، مختیار باچا  اور دیگر سیاسی اور سماجی رہنماوں نے شرکت کی  تعز یتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہئے رہنماوں نے کہا کہ میر حاصل بزنجو جمہوریت پسند رہنما تھے، ساری زندگی جمہوریت کیلئے وقف کی تھی جبکہ انکی مظلوم عوام اور پارلیمنٹ کی بالادستی کیلئے جدوجہد ہمیشہ یاد رکھی جائے گی،اس وقت ملک کو حاصل بزنجو جیسے لوگوں کی ضرورت ہے، میر حاصل بزنجو نے جمہوریت کیلئے جو کوششیں کی تھی وہ اج پوری اپوزیشن نہی کرسکتی،حاصل بزنجو جیسے لیڈر  کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا، ملک کی حالیہ صورتحال پر حاصل بزنجو صاحب کا موقف کلئیر تھا، حاصل بزنجو فوج کا سیاست میں مداخلت کے خلاف تھے ،حاصل بزنجو ملک میں بڑی سیاسی جماعتوں کے کردار سے مطمئن نہیں تھیسیاسی رہنماوں نے کہا کہ  ملک کے مقتدر حلقوں نے کھبی بھی 1973 کے آئین کو تسلیم نہیں کیاجبکہ 18 ویں ترمیم کے تحت صوبائی خود مختاری  کو شیخ مجیب کے چھ نکات سے تشبیہ دی گئی تھی انہوں نے کہا کہ میر حاصل بزنجو ہمیشہ تمام اپوزیشن کو اکھٹا رکھتے تھے،وقت اگیا ہے کہ ذاتی مفادات کی بجائے اپوزیشن عوام کی نمائندگی کرے  جبکہ ریاست کے گاڑی کے ڈرائیونگ سیٹ پر جو شخص بیٹھا ہے وہ اصل میں گاڑی نہیں چلا رہا ہے، حقیقی معنوں میں جو شخص گاڑی چلا رہا ہے وہ احتساب کے عمل سے آزاد ہے ،جب تک فوج سیاست سے بیدخل نہیں کیا جاتا ملک خوفناک حادثات کا شکار ہوسکتی ہیپختونخوا جمہوری اتحاد کے رہنماوں نے کہا کہ پارلیمانی نظام کو لپیٹنے اور صدارتی نظام کی لیے سپریم کورٹ میں  درخواستیں جمع کی جا رہی ہیں انہوں نے کہا کہ وقت اگیا ہے کہ فوجی افسران کے اثاثوں کو عام سرکاری ملازمین اور سیاستدانوں کی طرح ڈی کلئیر کیا جائے کیونکہ  ا حتساب سے ماورا لوگوں کے اثاثوں کی تفصیلات کی رپورٹس منظر عام پر ہیں انہوں نے کہا کہ  وزیراعظم کے معاون خصوصی کو درست وضاحت تک اپنے عہدے پر بیٹھنے کا کوئی اخلاقی حق حاصل نہیں  جبکہ ملک میں احتساب نہیں ہے، پرائم منسٹر کے اسپیشل اسسٹنٹ کے ملک سے باہر اثاثے ہیں اور نیب نے تاحال اثاثوں کے متعلق اپنا کردار  ادا نہیں کیا۔

آر ایم ٹی جائنٹ کونسل کا آج احتجاجی دھرنا دینے کا اعلان

مزید :

پشاورصفحہ آخر -