نوشہرہ، علاقہ مندوری کے عوام زمینوں پر غیر قانونی قبضے کیخلاف سراپا احتجاج 

نوشہرہ، علاقہ مندوری کے عوام زمینوں پر غیر قانونی قبضے کیخلاف سراپا احتجاج 

  

 نوشہرہ (بیورو رپورٹ)نوشہرہ کے علاقہ مندوری کے عوام نے ایم پی اے و ڈیڈک چیئرمین ضلع نوشہرہ اردیس خٹک کا زمینوں پر غیر قانونی قبضے کے خلاف علم بغاوت بلند کر دی،عوام سراپا احتجاج بن گئے،مظاہرین کا ایم پی اے اور ان کے ذاتی کارندوں کے خلاف زبردست نعرہ بازیاں، ایم پی اے کو غیر قانونی قبضہ ختم کرنے کیلئے 72گھنٹوں کا الٹی میٹم دے دی،بصورت دیگر نظامپور روڈ ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کرنے کا اعلان، اس سلسلے میں محمد مشتاق خان اور محمد حیات خان پسران سربلند خان کی قیادت میں مندوری سے درجنوں افراد پر مشتمل احتجاجی جلوس مندوری سے پرانا اٹک پل پہنچا اور وہاں پر احتجاجی مظاہرہ کیا تفصیلات کے مطابق نوشہرہ کے علاقہ مندوری کے عوام نے محمد مشتاق خان اور محمد حیات خان کی قیادت میں احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے محمد مشتاق، محمد حیات اور دیگر نے کہا کہ ایم پی اے ادریس خٹک نے رفاقت خان سے کل 80کنال زمین خریدی ہے لیکن وہ 400کنال کے قریب اراضی پر قابض ہوگیا ہے یہ کہاں کا انصاف ہے کیا ہم نے تحریک انصاف کو اس لئے ووٹ دئیے تھے کہ تحریک انصاف والے ہماری زمینوں پر قابض ہو جائیں گے یا ووٹ دینے کی سزا دی جارہی ہے انہوں نے کہا کہ ایم پی اے ادریس خٹک اقتدار کے نشے میں اتنے حواس باختہ ہوگئے ہیں کہ دوسروں کی ملکیتی جائیداد پر قبضے کرنے لگے اور وہ لینڈ مافیا کا سرغنہ ہے جس کا منہ بولتا ثبوت یہ کہ انہوں نے ہماری ملکیتی اراضی پر غیر قانونی کمرہ تعمیر کر دیا ہے انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے ماہ مارچ سے کئی بار اس مسلے کو خوش اسلوبی سے حل کرنے کی کوشش کی لیکن ایم پی اے ادریس خٹک نہ منت سماجت نہ جرگے اور نہ کسی اور طریقے سے ہماری 200کنال زمین پر سے قبضہ چھوڑنے کے لئے راضی ہے اس موقع پر رفاقت خان نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ میں نے ایم پی اے ادریس خٹک پر 80کنال زمین فروخت کی تھی تو پھر اس کا محمد مشتاق اور اس کے بھائی محمد حیات کی اراضی سے کیا لینا دینا اس لئے درخواست ہے کہ وہ 80کنال کے علاوہ دیگر اراضی پر غیر قانونی قبضہ ہونے سے باز آجائیں اور ہم وزیر اعظم عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان سمیت دیگر تحقیقاتی اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ایم پی اے حلقہ پی کے 65ادریس خٹک سے ہماری ملکیتی اراضی72گھنٹوں میں واگزار کرائیں یا ادریس خٹک خود ہماری زمینوں سے اپنا قبضہ ختم کریں بصورت دیگر ہم نظامپور روڈ ہرقسم کی ٹریفک کیلئے بند کر یں گے جس کی تمام تر ذمہ داری ادریس خٹک پر عائد ہوگی کیونکہ وہ پر امین احتجاج نہیں بلکہ ہم روڈ پر دمادم مست قلند ر کریں گے۔

مزید :

صفحہ اول -